پاکستانی معاشرہ تبدیل ہو رہا ہے : ماہرہ خان
20 مارچ 2018 (13:40)


لندن :لولی وڈ سپراسٹار ماہرہ خان نے عالمی سطح پر خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کیے جانے کے خلاف شروع ہونے والی مہم ’می ٹو‘ کے حوالے سے کہا ہے کہ اگرچہ انہیں آج تک کسی نے ہراساں نہیں کیا گیا، تاہم ’می ٹو‘ ان کی بھی کہانی ہے ۔


ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ شوبز میں قدم رکھنے کے بعد آج تک انہیں انڈسٹری میں نہ تو کسی نے ہراساں کیا اور نہ ہی انہیں کبھی کسی تضحیک آموز رویے کا سامنا کرنا پڑا۔ پاکستانی معاشرہ تبدیل ہو رہا ہے اور اب لوگ ایسے مسائل پر بھی گفتگو کرنے لگے ہیں، جن پر پہلے بات نہیں کی جاتی تھی۔ان کی فلم پر پابندی مخصوص لوگوں کی سوچ نے لگائی، جب کہ فلم کو نمائش کی اجازت پورے پاکستان کی سوچ نے دلائی۔


ماہرہ خان کا کہنا تھا کہ ’ورنہ‘ میں کام کرنے سے پہلے وہ تھوڑی سے پریشان تھیں کہ ایک فلم معاشرے میں کس طرح تبدیلی لائے گی، تاہم وہ فلم کے موضوع کے حوالے سے بالکل مطمئن تھیں، کیوں کہ وہ ایسے ہی مسائل کے خلاف ہمیشہ سے کھڑی ہوتی ہیں۔قصور کی معصوم زینب کے بیہمانے قتل کے واقعے کو انہوں نے پاکستان کے لیے تبدیلی کا اہم واقعہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس سانحے کے بعد ہرکوئی انصاف کے لیے اٹھ کھڑا ہوا اور ہرکوئی گلیوں میں نعرے لگاتا نظر آیا۔


ای پیپر