وزیر اعظم کیخلاف تحریک عدم اعتماد ،مولانا کی دبنگ انٹری
20 جون 2020 (22:12) 2020-06-20

اسلام آباد :جمعیت علما اسلام(ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ 18ویں ترمیم سے متعلق حکومتی بیانات تشویشناک ہیں۔

اسلام آباد میں جے یو آئی کے زیر اہتمام بلوچستان کے حوالے سے اے پی سی کا اٹھارہویں ترمیم بارے حکومتی بیانات پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ اٹھارہویں ترمیم پر اس کی روح کے مطابق عمل کیا جائے گا کوئی ردوبدل قبول نہیں ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کے خلاف تحریک عدم اعتماد کا آپشن موجود ہے، تجویز کو عملی جامعہ پہنانے پر بار بار سوچنے کی ضرورت ہے، اکثریت ہمارے پاس پہلے بھی تھی لیکن سینیٹ الیکشن میں کیا ہوا؟ان کا مزید کہنا تھا کہ منتخب قیادت ہی ملک کو بحران سے نکال سکتی ہے، سیاسی جماعتوں کے ساتھ رابطے کا عمل شروع کیا ہے۔

سی پیک میں شامل بلوچستان کے تمام منصوبوں پر عمل کیا جائے اور ٹڈی دل کے خاتمے کیلئے ٹھوس اقدامات کیے جائیںمولانا فضل الرحمن نے کہا کہ کورونا سے متعلق اسپتالوں میں انتظامات نہ ہونے کے برابر ہیں ہم پر نیب یا احتساب کا دباو نہیں ہے، پی ٹی آئی پارٹی فنڈنگ اوربی آرٹی کیس کیوں التوا کا شکار ہے؟احتساب صرف اپوزیشن کیلئے ہے، یہ سیاسی ہتھیار ہے جو اپوزیشن کیخلاف استعمال ہو رہا ہے۔


ای پیپر