نواز شریف نے اے پی سی کے تمام اختیارات شہباز شریف کو سونپ دئیے
20 جون 2019 (20:44) 2019-06-20

لاہور: مسلم لیگ (ن) کے قائد نوازشر یف سے صدر (ن) لےگ مےاں شہبا زشر یف اور مر ےم نواز سمےت فےملی کے دےگر افراد کی ملاقاتےں جبکہ نوازشر یف نے شہبا زشر یف اور مر ےم نواز کو حکومتی پالےسوں کے خلاف بھر پور عوام رابطہ مہم اور پار لےمنٹ کے اندر پارٹی بجٹ کے خلاف اپوزےشن سے ملکر سخت حکمت عملی اختےار کر نے کی ہداےت کردی جبکہ جےل انتظامےہ نے حکومتی احکامات پر کوٹ لکھپت جیل میں نوازشر یف سے سیاسی ملاقاتیں منسوخ کردیں۔

تفصیلات کے مطابق جمعرات کا روز سابق وزیراعظم نواز شریف کا جیل میں ملاقات کے لیے مختص ہے لیکن حکومتی احکامات پر جیل انتظامیہ نے نواز شریف کی سیاسی ملاقاتیں منسوخ کردی ہیں۔لیگی ذرائع کے مطابق نوازشریف سے خاندان کے چند افراد نے دو گھنٹے طویل ملاقات کی جس دوران نوازشریف کی صحت اور ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا جبکہ لیگی قیادت کو ملاقات کی اجازت نہ دیئے جانے پر سابق وزیراعظم نے تشویش کا اظہار کیا۔

لیگی ذرائع نے مزید بتایا کہ ملاقات کے دوران شہبازشریف نے اپوزیشن قیادت سے ملاقاتوں اور اے پی سی کے بارے میں بریفنگ دی اور بجٹ کارروائی کے بارے میں آگاہ کیا، شہبازشریف نے کہا کہ حکومت اپوزیشن جماعتوں کی صف بندی سے پریشان ہے جبکہ نوازشریف نے شہبازشریف کی بجٹ تقریر کو سراہتے ہوئے کہا کہ تقریر کی دھوم مچی ہوئی ہے اور اے پی سی کے بارے میں تمام اختیارات شہبازشریف کو سونپ دیئے اور ہدایت کی کہ حکومت کو ٹف ٹائم دیں۔ملاقات کے دوران مریم نواز نے اپنے والد کو عوامی رابطہ مہم پر بریفنگ دی جس پر نوازشریف نے تحریک کو کامیاب بنانے کے لیے مریم اور شہبازشریف کو آپس میں مشاور ت کی ہدایت کردی۔


ای پیپر