آصف زرداری اور خواجہ سعدرفیق کے پروڈکشن آرڈر جاری
20 جون 2019 (00:23) 2019-06-20

اسلام آباد : اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے وزارتِ قانون کی رائے کے بعد آصف زرداری اور خواجہ سعد رفیق کے پروڈکشن آرڈر جاری کرد دیئے ۔

تفصیلات کے مطابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی زیر صدارت ہونے والے بجٹ سیشن اجلاس میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے آصف علی زرداری ، خواجہ سعد رفیق اور فاٹا کے دو ممبران کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔تین روز قبل وزیراعظم عمران خان نے تحریک انصاف کی پارلیمانی پارٹی اور حکومتی اتحادی جماعتوں کے اجلاس میں ہدایت کی تھی کہ آصف علی زرداری سمیت کسی بھی ملزم کے پروڈکشن آرڈر جاری نہ کیے جائیں۔پیپلز پارٹی کی جانب سے بھی ممبر قومی اسمبلی کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے کے لیے اسپیکر اسد قیصر کو تحریری طور پر درخواست دی گئی تھی۔

اب اطلاعات ہیں کہ اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے سابق صدر آصف علی زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری کردیے ہیں۔پی پی کے صدر آصف زرداری کے پروڈکشن آرڈر بجٹ سیشن کے لیے جاری کیے گئے ہیں اور قومی اسمبلی کا بجٹ سیشن 29 جون تک جاری رہے گا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ آصف زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری ہونے سے پہلے خورشید شاہ نے اسد قیصر کو کئی بار فون کیا۔خورشید شاہ نے سابق صدر آصف علی زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ آصف زرداری آج جمعرات کی صبح کے اجلاس میں شریک ہوں گے۔پیپلز پارٹی کے رہنما عبدالقادر پٹیل، شاریہ مری اور شگفتہ جمانی پروڈکشن آرڈر وصول کرنے کے لیے موجود تھے۔

نجی ٹی وی کے مطابق علی وزیر اور محسن داوڑ کے پروڈکشن آرڈر جاری نہیں کیے گئے۔یاد رہے کہ آصف زرداری جعلی بینک اکاﺅنٹس کیس اور خواجہ سعد رفیق آشیانہ ہاسنگ اسکیم اسکینڈل میں گرفتار ہیں۔ اپوزیشن کی جانب سے چار اراکین اسمبلی کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔ بدھ کو ہونے والے اسمبلی اجلاس میں بلاول بھٹو زرداری نے نکتہ اعتراض پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ بجٹ سیشن بہت اہم ہوتے ہیں معاشی فیصلے لیئے جاتے ہیں، سیشن ایک ہفتے سے زیادہ سے چل رہا ہے،اس ایوان کے چار نمائندوں کو بجٹ سیشن میں نہیں آنے دیا جا رہا۔

انہوں نے اسپیکر سے مطالبہ کیا کہ خواجہ سعد رفیق، محسن داوڑ، علی وزیر اور سابق صدر آصف علی زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری کیے جائیں۔یہ بھی یاد رہے کہ گزشتہ روز ایوان میں ایم کیو ایم کے اراکین نے آصف زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے کی حمایت کرتے ہوئے بلاول بھٹو سے ملاقات بھی کیا تھی، بعد ازاں ایم کیو ایم پاکستان کے رکن امین الحق نے اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے تین نکات بیان کیے تھے جس میں ان کا کہنا تھا کہ پروڈکشن آرڈر جمہوریت کے فروغ، ایوان کی تاریخ اور سیاستدان کی خدمات کو مدنظر رکھتے ہوئے جاری کیے جائیں۔


ای پیپر