پاکستانیوں کیلئے ہائوسنگ سکیم ،چین نے بڑی خوشخبری سنا دی
20 جولائی 2020 (20:46) 2020-07-20

اسلام آباد:پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) اتھارٹی کے چیئرمین لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ کورونا کے باوجود منصوبے پر کام نہیں رکا اور چین وزیراعظم ہاؤسنگ اسکیم کیلئے 10 کروڑ ڈالر دینے کو تیار ہیں۔

سینیٹ کی خصوصی کمیٹی برائے سی پیک کا اجلاس سینیٹر شیری رحمن کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوا جہاں چیئرمین سی پیک اتھارٹی لیفٹننٹ جنرل(ر) عاصم سلیم باجوہ نے برہفنگ دیتے ہوئے کہا ہے کہ اتھارٹی ایک سویلین ادارہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ کورونا کے باوجود سی پیک کے کسی منصوبے پر کام نہیں رکا، اورینج ٹرین قطعی سیاسی منصوبہ نہیں اور ٹرین جلدعوام کے لیے کھول دی جائے گئی۔

انہوں نے کہا کہ چین کم آمدن ہاؤسنگ اسکیم کیلئے 10 کروڑ ڈالر دینے کو تیار ہے۔ انہوںنے کہاکہ قرض سے زیادہ سرمایہ کاری پر زور ہے، پچھلے 10 دنوں میں 40 لاکھ ڈالرکی سرمایہ کاری پاکستان میں آئی ہے۔بریفنگ میں انہوں نے کہا کہ سی پیک کے تحت کراچی سے پشاورتک7 ارب 20 کروڑروپے کے ریلوے منصوبے ایم ایل ون کی منظوری دی جاچکی۔انہوں نے کہا کہ سڑکوں سے ریل پر منتقل ہوں گے تو ہمارا نظام بہتر ہوگا۔لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ سی پیک کے منصوبوں پر کام جاری ہے، سی پیک کے تحت سوشیواکنامی منصوبوں میں سب سے زیادہ حصہ بلوچستان اور سب سے کم حصہ پنجاب کا ہے۔

انہوں نے کہا کہ خصوصی اقتصادی زون دیگر شہروں کے علاوہ رشکئی، بوستان، حب اور گوادر میں بھی بنائے جائیں گئے اور ان منصوبوں سے پاکستان کے نوجوانوں کو روزگار ملے گا۔عاصم باجوہ نے کہا کہ وزیراعظم نے واضح ہدایت کی تھی کہ سی پیک کے کسی منصوبے کو سست روی کا شکار نہیں ہونا چاہیے، حکومت نے آزاد کشمیر کے ساتھ 100 سے زائد منصوبوں پر دستخط کیے۔

انہوں نے کہا کہ کو ئلے کی کان لگانے کے لیے105 کلومیٹر کی ریلوے لائن درکار ہے، منصوبہ بندی کمیشن سے بات ہو رہی ہے، گودارائیرپورٹ کی تعمیر شروع ہو چکی، جس پر23 کروڑ ڈالر لاگت آئے گی اور یہ منصوبہ چینی گرانٹ سے مکمل ہوگا۔ انہوںنے کہاکہ گوادر میں 150 بستروں کا ہسپتال بھی بن رہا ہے، پاکستان چین کے ساتھ مل کر زراعت اور سائنس و ٹیکنالوجی کے شعبوں میں بھی کام کر رہا ہے۔چیئرمین سی پیک اتھارٹی نے کہا کہ پاکستان نے وینٹی لیٹرز بنا لیے ہیں اور جلد سائنس و ٹیکنالوجی کے پارکس بھی بنائیں گے۔انہوں نے کہا کہ چین کے ساتھ کم لاگت کے گھروں کی تعمیر کے حوالے سے کام ہو رہا ہے۔


ای پیپر