فائل فوٹو

 خیبرپختونخوا، نانبائیوں کی ہڑتال ،تندور بند ،شہریوں کو شدید مشکلات
20 جنوری 2020 (11:38) 2020-01-20

پشاور: خیبرپختونخوا میں نانبائیوں نے ہڑتال کردی  اور تندور بند کر دیئے ، ہڑتال کے باعث  طلبہ  اور ملازمین  ناشتے کے بغیر سکولوں اوردفاتر میں جانے پر مجبور ہیں، حکومت نے ذخیرہ اندوزوں کیخلاف کارروائی کا حکم دیدیا ۔

 تفصیلات کے مطابق پشاور سمیت خیبر پختونخوا کے مختلف علاقوں میں نان بائیوں نے غیر معینہ مدت کے لیے ہڑتال کرتے ہوئے تندور بند کردیے جس کے نتیجے میں شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔

نان بائیوں نے آٹا مہنگا ہونے کے باعث روٹی کی سرکاری قیمت10 سے بڑھاکر 15روپے کرنے کا مطالبہ کیا ہے لیکن صوبائی حکومت نے روٹی اور نان کی قیمت میں اضافہ نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

نان بائیوں نے مطالبات کی منظوری کے لیے ہڑتال کردی اور پہلے مرحلے میں پشاور اور ہزارہ ڈویژن میں تندور بند کردیے ہیں۔ ہڑتال کے باعث طلبہ و طالبات اور سرکاری و نجی ملازمین کو روٹی سے ناشتہ کئے بغیر اسکول اور دفاتر جانا پڑا۔

ادھر حکومت نے آٹا بحران پر قابو پانے کیلئے ذخیرہ اندوزوں اور گرانفروشوں کے خلاف سخت کارروائی کا حکم دیا ہے۔واضح رہے کہ زرعی ملک ہونے کے باوجود ملک بھر میں آٹے کا بحران پیدا ہوگیا ہے جس کے باعث 45 روپے کلو والا آٹا 70 روپے کلو میں فروخت ہورہا ہے۔


ای پیپر