فوٹو بشکریہ فیس بک

ساہیوال واقعے کی ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ آگئی
20 جنوری 2019 (10:31) 2019-01-20

لاہور: ساہیوال واقعے کی ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ آگئی، خاتون نبیلہ کو چار گولیاں ماری گئیں، 13 سالہ بچی اریبہ کو چھ اور والد خلیل کو 13 گولیاں لگیں۔

ابتدائی رپورٹ کے مطابق کار ڈرائیور ذیشان کو 10 گولیوں سے نشانہ بنایا گیا، چاروں افراد کو انتہائی قریب سے گولیاں ماری گئیں۔

ادھر وزیراطلاعات فواد چوہدھری نے صاف صاف بتادیا کہ سی ٹی ڈی غلط نکلی تو ذمہ داروں کو نشان عبرت بنا دیں گے۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے بھی قاتلوں کو کیفرکردار تک پہنچانے کی یقین دہانی کرادی۔

واقعے میں ملوث سی ٹی ڈی اہلکاروں کو بھی حراست میں لے لیا گیا ہے۔ ایڈیشنل آئی جی اعجاز شاہ کی سربراہی میں بننے والی جے آئی ٹی تین روز میں رپورٹ پیش کرے گی۔

وزیر اعظم کے معاون خصوصی افتخار درانی نے واقعے پر

افسوس کا اظہار کیا، بولے ذمہ داروں کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے۔ وزیر اعظم نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے رابطہ کرکے متاثرہ خاندان کو جلد انصاف کی فراہمی کی ہدایت بھی کی۔


ای پیپر