WhatsApp, resumption, controversial, privacy policy, Telegram
20 فروری 2021 (10:23) 2021-02-20

لندن: میسجنگ ایپلیکیشن واٹس ایپ کا پھر متنازعہ پرائیویسی پالیسی جاری رکھنے کا اعلان ، صارفین کو ایپلی کیشن استعمال کرنے کے لیے 15 مئی تک نئی پالیسی کو قبول کرنا ہوگا۔

اس نئی پرائیویسی پالیسی کے تحت ، کمپنی کا صارفین کے ڈیٹا کے حوالے سے اختیار بڑھ جائے گا جبکہ کاروباری ادارے فیس بک کی سروسز کو استعمال کرکے واٹس ایپ چیٹس کو اسٹور اور منیج کرسکیں گے ۔ صارفین کو نئی پرائیویسی پالیسی پڑھنے کے لیے ایک بینر بھی دکھایا جائے گا۔

خیال رہے کہ واٹس ایپ کی پرائیویسی پالیسی کے بعد میسجنگ ایپلی کیشن ٹیلی گرام دنیا میں سب سے زیادہ ڈاؤن لوڈ کی جانے والی ایپ بن گئی ہے۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق گزشتہ ماہ ٹیلی گرام نے ٹک ٹاک ، فیس بک اور انسٹاگرام کو مقبولیت میں پیچھے چھوڑ دیا ہے ۔ 6 کروڑ 30 لاکھ سے زائد مرتبہ ٹیلی گرام کو ڈاؤن لوڈ کیا گیا۔

اس موقع پر ٹیلی گرام انتظامیہ کا کہنا تھا کہ صارفین نے اُن پر بھر پور اعتماد کیا ہے ۔ اُن کی پوری کوشش ہو گی کہ وہ صارفین کو بہترین سروس فراہم کریں تاکہ اُن کا اعتماد ہمیشہ قائم رہے۔

خیال رہے کہ واٹس ایپ کی پرائیویسی پالیسی کے تنازع کے بعد ٹیلی گرام سمیت دیگر میسجنگ ایپلی کیشنز کی مقبولیت میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے اور صارفین اُن کو استعمال بھی کرنے لگے ہیں۔


ای پیپر