Attack, UN observer mission, Pakistan, UN, India
20 دسمبر 2020 (18:21) 2020-12-20

اسلام آباد: پاکستان نے بھارت کی جانب سے یو این مبصر مشن کی گاڑی کو نشانہ بنانے کا معاملہ اقوام متحدہ میں اٹھا دیا۔

یو این کے سیکرٹری جنرل اور صدر کے نام خط میں لکھا کہ اقوام متحدہ بھارت کی جانب سے مبصر مشن کی گاڑی کو نشانہ بنانے کی تحقیقات کرے، بھارت مسلسل سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزیاں کر رہا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کی جانب سے کہا گیا کہ شر پسند ہمسائے نے کوئی مہم جوئی کی تو بھرپور جواب دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت داخلی مسائل اور مقبوضہ کشمیر سے دنیا کی توجہ ہٹانے کے لیے فالس گلیگ آپریشن کر سکتا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ مبصرین کی گاڑی پر بھارتی فورسز نے جان بوجھ کر حملہ کیا، حملے کا مقصد فوجی مبصر مشن کو کام سے بزور طاقت روکنا ہے، اقوام متحدہ بھارت کو 2003 کے فائر بندی انتظام پر عملدرآمد کرائے۔

خیال رہے کہ اقوام متحدہ مبصر مشن کی گاڑیوں پر بھارتی افواج کی طرف سے فائرنگ کے بعد پاکستان نے بھارتی ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کیا اور اقوام متحدہ مبصر مشن کی گاڑی کو نشانہ بنانے پر بھارت کے خلاف اپنا شدید احتجاج ریکارڈ کروایا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بھارتی فوج کی طرف سے پاکستان کی سرحدی لائن پر اقوام متحدہ مبصرین مشن کی گاڑیوں کو نشانہ بنانے پر مودی سرکار سے شدید احتجاج ریکارڈ کرواتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ بھارتی فوج نے یو این ملٹری آبزرور گروپ پر جان بوجھ کر فائرنگ کی ، انہوں نے مزید کہا کہ بھارتی حملے کی صورت میں مبصر مشن کی گاڑی کو شدید نقصان پہنچا لیکن اقوام متحدہ کے افسران اس حملے میں محفوظ رہے۔

یاد رہے کہ جب سے بھارت میں مودی سرکار اقتدار میں آئی ہے بھارتی فوج کی جانب سے مسلسل سیز فائر کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے۔


ای پیپر