saudi arabia,Baitullah,door,designer,died,engineer,munir al-jindi
20 دسمبر 2020 (17:32) 2020-12-20

مکہ المکرمہ : سعودی عرب میں بیت اللہ کا خالص سونے سے بنا ہوا دروازہ ڈیزائن کرنے والے انجینئر منیر الجندی انتقال کر گئے۔

تفصیلات کے مطابق مکہ مکرمہ میں بیت اللہ کا سونے کا دروازہ ڈیزائن کرنے کا انجینئر منیر الجندی جرمنی میں انتقال کر گئے ۔ وہ طویل عرصہ میں مختلف عوارض کا شکار تھے۔  بیت اللہ کا دروازہ شاہ خالد کے دور میں لگایا گیا تھا جب شاہ خالد نے 1397 ہجری میں نماز بیت اللہ کے اندر ادا کی اور اسی موقع پر انہوں نے یہ ہدایت کی کہ بیت اللہ کا دروازہ خالص سونے سے تیار کیا جائے۔ اس کام کیلئے ان کی خاص ہدایت تھی کہ ڈیزائنر مسلمان ہونا چاہیے کیونکہ اس کا نام دروازے پر کنداں ہونا تھا۔

اس مبارک کام کیلئے شام کے مسلمان ڈیزائنر منیر الجندی کا انتخاب ہوا جن کی پیدائش بھی شام کے شہر حمص میں ہوئی تھی۔ اس دروازے کی تیاری کیلئے مکہ مکرمہ کے مشہور سنار شیخ محمود بند بدر کو سعادت حاصل ہوئی اور ان کے کارخانے میں خالص سونے کا یہ دروازہ تیار ہوا۔ اس دروازے کی ڈیزائن اور تیاری 1398 میں مکمل ہو گیا تھا اور اس پر انجینئر منیر الجندی کا نام بھی کنداں کیا گیا ۔ دروازے کیلئے 280 کلو گرام خالص سونا استعمال کیا گیا۔

اس مبارک دروازے کے نقش و نگار معروف نقاش شیخ عبدالرحیم بخاری نے بنانے کی سعادت حاصل کی۔ بیت اللہ کا یہ دروازہ 3 میٹر بلند جبکہ 2 میٹر چوڑا ہے۔ یہ دروازہ دو کواڑوں کا ڈیزائن کیا گیا جبکہ اس کا فریم تھائی لینڈ میں تیار ہونے والے دنیا کی مہنگی ترین لکڑی ’’میکا مونگ‘‘ سے بنایا گیا۔


ای پیپر