Greetings, courage, Sardar Usman Bazdar, PTI
20 دسمبر 2020 (12:15) 2020-12-20

وزیراعلیٰ پنجاب کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے اپنے ایک بیان میں کیا خو ب کہا ہے کہ پی ڈی ایم کرپشن کے مگرمچھوں کا ٹولہ ہے۔یہ مگر مچھ صرف نگلنا جانتے ہیں۔اور اگلتے وقت مگرمچھ کے آنسو بہار ہے ہیں۔مگرمچھ سے یاد آیا کہ مگر مچھ بھی اس پر شرمندہ ہوگا کہ اس کے نام کو لوٹ مار کا پیسہ ہضم کرنے والوں کے جتھے پی ڈی ایم کے ساتھ لگایا گیا ہے۔فلسفی شاعر علامہ محمد اقبال کی نظم نہنگ بچہ خویش (ایک مگر مچھ کاا پنے بچے سے مکالمہ )میں نے پڑھی۔جس میں ایک مگر مچھ نے اپنے بچے سے کیا ہی عمدہ بات کہی کہ یا د رکھوہمارے لیئے ان موجوں سے ٹکراتے رہنے کی بجائے دریا کے کنارے پر آرام کرنا حرام ہے۔یعنی مگر مچھ نے اپنے بچے کو مسلسل محنت کرنے کا درس دیا جس میں اس کے لیئے اپنا شکار اپنے زور بازو یعنی محنت و مشقت کے ساتھ کرنے کا پیغام پنہاں تھا۔مگر مچھ کے لیئے ضروری ہے کہ وہ ہمہ وقت دریا کی موجوں سے الجھتا رہے اور ساحل پر آرام کرنے سے سخت پرہیز کرے۔کیونکہ اصل میں یہ سارا دریاہی رہنے کی جگہ ہے۔مگر مچھ اپنے بچے کو کہتا ہے کہ اس بات کو سمجھنے کی کوشش کر کہ تونے دریا کے پہلو میں نہیں بلکہ دریا تیرے پہلومیں ہے۔مطلب یہ کہ تو دریا کے لیئے نہیں دریا تیرے لیئے ہے۔اس لیئے دریا کے طوفان سے ٹکراتے رہنا تیری فطرت ہے اور یہی تیر ی صفت ہے۔اگر تونے دریا کی بپھری لہروں میں لمحہ بھر کے لیئے آرام کیا تو پانی کی یہ تند و تیز موجیں تجھے ہی بہا لے جائیں گی اور تجھے غارت کرڈالیں گی۔لہذا ان موجوں سے الجھتے رہنا ہی تیر ی زندگی ہے۔یہاں ملاحظہ کیا جاسکتا ہے کہ دریا کا ایک جانورتک اپنے بچے کو محنت کرکے زندگی گذارنے کے پتہ کی بات بتارہا ہے۔اس کے برعکس پی ڈی ایم کے ٹولے پر نظر دوڑائی جائے تو یہ ٹولہ ملک کے لوٹے ہوئے مال کو بچانے کے لیے بیچارے غریبوں کو اپنے گھروں سے باہر نکلنے کا جھانسہ دے رہا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہمت بے مثال کی داد دینی پڑتی ہے۔وہ ڈرامہ باز شوباز شہباز شریف کے شاطرانہ حربوں کا سیاسی جواں مردی سے مقابلہ کررہے ہیں۔ کہتے ہیں نہ کہ اگر ہمت لازوال 

ہو تو راستوں کے پتھر بھی ریزہ ریزہ ہوجاتے ہیں۔کیونکہ کسی ہمت والے کے آگے بڑھتے قدم راستے کی ہر رکاوٹ کو پاش پاش کردیتے ہیں۔اورباد مخالف بھی اس کا کچھ نہیں بگاڑ سکتی۔اس لحاظ سے سردار عثمان ایک مضبوط او ر اٹوٹ ہمت والے پنجاب کے سربراہ ہے۔پچھلی حکومتوں نے مہنگی بجلی کے منصوبے شروع کیئے تھے جن کے ذریعے وہ عوام پر بجلی کو مہنگا کرنے کا بم گراتے رہے۔اب بزدار حکومت عوام کو سستی بجلی فراہم کرنے کے لیئے پرعزم ہے۔

دوسالوںمیں وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی حکومت پاکپتن اور مرالہ میں دو ہائیڈرو پاور پراجیکٹس مکمل کرچکی ہے۔ان سے 2کروڑ 70لاکھ سے زائد یونٹ بجلی حاصل کی جاچکی ہے۔اس کے علاوہ 7ہزار سرکاری اداروں کی سولرائزیشن بھی مکمل ہوچکی ہے۔جبکہ ان میں 6991پرائمری اسکول اور ڈی ایچ کیو ہے۔10ہزار 861اسکولوں 2324بنیادی مراکز صحت کی سولرائزیشن بھی مکمل ہوجائے گی۔اللہ تعالی کے فضل و کرم سے 1663میگاواٹ پنجاب تھرمل پاور پلانٹ تیزی سے تکمیل کے مراحل میں ہے۔جو اگلے سال کے آخر تک مکمل ہوجائے گا۔جس سے سالانہ 10ارب روپے مالیت کے یونٹس پیدا ہوں گے۔ اس طرح گھروں اور صنعتوں کو سستی بجلی فراہم کی جائے گی۔اس کے ساتھ 93کلومیٹر طویل گیس پائپ لائن اور 48کلومیٹر طویل ٹرانسمیشن لائن پراجیکٹ مکمل ہوچکے ہیں۔

بدقسمتی سے ماضی کی حکومت نے ٹرانسمیشن لائن پر ذرہ برابر کام نہیں کیا تھا۔جس سے آدھی بجلی ضائع ہوجاتی تھی۔سردار عثمان بزدار پنجاب میں مہنگی بجلی پیدا کرنے کی بجائے توانائی کے متبادل ذرائع اور ہائیڈرل پاور پلانٹ پر توجہ دے رہے ہیں۔ تاکہ مہنگائی میں پھنسے عوام کو سستی بجلی فراہم کرسکیں۔ ملک توانائی کے حصول میں خود کفیل کرسکیںاور دوسرے صوبوں کو بھی بجلی فراہم کرسکیں۔ 

وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے عوام کی خدمت میں جہد مسلسل انتھک محنت اور عملاََ کام کرکے بہروپیئے شیروں کے سینوں سے ان کا دل نکال لیا ہے۔کرپشن کے بل بوتے پر پھلنے پھولنے والا ان کا شاہانہ جاہ و جلا ل اور چمک دمک کا ہر جلوہ خاک میں مل گیا ہے۔بزدار حکومت نے 63ارب روپے کی لاگت سے لاہور کے لیئے میگا ترقیاتی پیکج کی منظوری دی۔جس میں 10انڈر گرائونڈ واٹر اسٹوریج ٹینکس بھی شامل ہیں۔جو کہ بارش کے پانی کوذخیرہ کریں گے اور شہر بھر کے ہارٹیکلچر کی ضروریا ت کو پورا کرنے میں کام آئے گا۔ لاہور نے میگا پراجیکٹ میں 35ہزار اپارٹمنٹس کی تعمیر پر 40ارب روپے، 1000بیڈز پر مشتمل نئے ہسپتال پر7ارب روپے ،ریلوے اسٹیشن شیرانوالہ گیٹ اوور ہیڈ پر 4.5ارب روپے ،شاہکا م چوک فلائی اوور پر 32ارب روپے ،کریم مارکیٹ اوور ہیڈ برج پر 1.5ارب روپے ،1.5ارب روپے موڑ سمن آباد کے پاس اوور ہیڈبرج، 10انڈر گرائونڈ واٹر اسٹویج ٹینک پر ایک ارب روپے،گلاب دیوی ہسپتال کے پاس انڈر پاس پر ایک ارب روپے اور اسٹیٹ آف دی آرٹس بس ٹرمینل پر 3ارب روپے خرچ ہوں گے۔

شہباز شریف اقتدار کی قوت سے جھوٹ کو سچ کہتے تھے۔ وہ زہر کو کوثر بناکر پیش کرتے رہے۔لوگوں کو زیر کو ز بر ماننے پر مجبور کرتے تاکہ وہ اس کی طاقت سے مرعوب ہوجائیں ورنہ لوگ تو جانتے تھے کہ سچ کیا ہے۔اب جھوٹ کے بادل چھٹ چکے ہیں۔پنجاب کے وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار صو بے میں سیاحت کو فروغ دینے کے لیئے عملی اقدام اٹھاچکے ہیں۔جس کے تحت پنجاب کے 6سیاحتی مقامات پر روڈ انفرااسٹرکچر کو بہتر بنانے کے لیئے 83کروڑ خرچ کرچکے ہیں۔اس کے علاوہ پنجاب میں 176ریسٹ ہائوس عوام کے لیئے پہلے ہی کھول چکے ہیں۔جس میں عوام ان ریسٹ ہائو سز میں قیام کے لیئے آن لائن بکنگ کراسکتے ہیں۔ لاہور کے بعد راولپنڈی میں ڈبل ڈیکر ٹورسٹ بس سروس کاآغاز ہوا ہے اور بہاولپور، ڈیرہ غازی خان اور ملتان میں سروس شروع کرنے کے لیے بسیں بھجوا چکے ہیں۔

 بزدار حکومت نے نئی سرمایہ کاری کے مواقع پید ا کرنے کے لیئے 5نئے سیمنٹ کے پلانٹس لگانے کی منظوری دی۔جس نے 200ارب روپے کی سرمایہ کاری ہوگی۔سیالکوٹ میں 5ارب روپے کی لاگت سے 500بیڈز کا جنرل ہسپتال بنارہے ہیں۔ وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار پنجاب کے وہ باہمت سربراہ ہیں جو وزیراعظم پاکستان عمران خان کے ویژن کے مطابق بھرپور کام کررہے ہیں۔ویل ڈن سردار عثمان بزدار۔


ای پیپر