ایران نے پاکستان سے کینو کی امپورٹ پر لگائی گئی پابندی کو ختم کر دیا
سورس:   فائل فوٹو
20 اپریل 2021 (22:31) 2021-04-20

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے دورہ ایران کے اثرات سامنے آنے لگے۔ تہران نے 2012ء میں کینو کی امپورٹ پر لگائی گئی پابندی کو ختم کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق تہران میں پاکستان ہاؤس آمد کے موقع پر شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ایرانی حکومت کا 9 سال سے پاکستانی کینوکی امپورٹ پر عائد پابندی کو ختم کرنا خوشی کا باعث ہے جبکہ یہ اقدام پاکستان اور ایران کے مابین دو طرفہ تعلقات کے استحکام کا مظہر ہے، کینو کی کاشت اور کاروبار سے وابستہ پاکستانی تاجروں کیلئے ایک انتہائی خوش آئند بات ہے 

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان اور ایران کے یکساں مذہبی، تہذیبی اقدار پر استوار، دیرینہ برادرانہ تعلقات ہیں، میرے دورہ کا مقصد اقتصادی و تجارتی تعلقات کو مستحکم بنانا ہے۔ پاکستان اور ایران کے مابین تجارت کے فروغ کے وسیع مواقع موجود ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے سفارتکاروں کو معاشی سفارت کاری پر عمل پیرا ہوتے ہوئے پاکستان کی اقتصادی ترقی کیلئے کاوشیں بروئے کار لانا ہوں گی۔ ایران کا مشرکہ بارڈر پر "تجارتی مراکز کھولنے کی تجویز پر بھرپور آمادگی کا اظہارقابل ستائش ہے۔

شاہ محمود کا کہنا تھا کہ کل پاک ایران مشترکہ سرحد پر بارڈر مارکیٹ کا خواب شرمندہ تعبیر ہونے جا رہا ہے اور مشترکہ سرحد پر باڈر مارکیٹس کے قیام سے قانونی تجارت کو فردغ ملے گا اور وہیں دونوں جانب سرحدی علاقے کے مکینوں کی معاشی حالت بدل جائے گی۔

بشکریہ(نیو نیوز)


ای پیپر