TLP, negotiations, Shahid Khaqan Abbasi, PTI government, PM Imran Khan, Sheikh Rasheed
20 اپریل 2021 (11:11) 2021-04-20

اسلام آباد: سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ناموس رسالت ﷺ کے معاملے پر کوئی دورائے نہیں ، جب مذاکرات کرنے تھے تو کالعدم کیوں قرار دیا ، حکومت جو وعدے کرتی ہے وہ پارلیمنٹ کے سامنے لانے چاہئیں ۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ خلائی مخلوق اب زمینی مخلوق بن چکی ہے ، لاہور میں جو کچھ ہوا اس کے حقائق سامنے نہ آسکے ۔ ٹرتھ کمیشن بنا دیں ، حقائق آپ کے سامنے آجائیں گے ۔ ملکی حالات خراب ہوتے جا رہے ہیں ، کسی کو پرواہ نہیں ۔

انہوں نے کہا کہ وزیروں کو آگے پیچھے کرنے سے معاملات بہتر نہیں ہوں گے ۔ جو وزیر نالائق ہو وہ دوسرے عہدے پر بھی نالائق ثابت ہوتا ہے ۔ جس ملک کے وزیر جھوٹ بولتے ہوں وہاں کیا توقع رکھی جاسکتی ہے ۔ مظاہرین کہہ رہے ہیں سفیر کو نکالنے کا وعدہ کیا تھا ، یہ وعدہ کس نے کیا ؟ جمہوریت کے اس دور میں جماعتوں کا کالعدم قرار دیا جاتا ہے ۔

سابق وزیر اعظم نے کہا کہ وزیراعظم کی گزشتہ روز تقریر کی کسی کو سمجھ نہیں آئی ، وزیراعظم میں ہمت تھی تو پارلیمنٹ میں تقریر کرتے ۔


ای پیپر