Imran Khan, Afghan Presidential palace, Ashraf Ghani, Shah Mahmood Qureshi
کیپشن:   سکرین گریب نیو نیوز
19 نومبر 2020 (15:31) 2020-11-19

کابل: وزیراعظم عمران خان کی افغان صدارتی محل آمد ، صدارتی محل پہنچنے پر افغان صدر نے عمران خان کا استقبال کیا۔

تفصیلات کے مطابق افغان صدارتی محل میں وزیراعظم عمران خان کے اعزاز میں استقبالیہ تقریب ہوئی ، تقریب میں دونوں ممالک کے قومی ترانے بجائے گئے۔ وزیر اعظم عمران خان کو افغان مسلح دستے کی طرف سے سلامی دی گئی۔ عمران خان نے افغان صدر کے ہمراہ گارڈ آف آنر کا معائنہ کیا۔ افغان صدر نے وزیر اعظم کا مہمانوں سے تعارف کرایا۔ اسی طرح عمران خان نے بھی افغان صدر کا پاکستانی وفد سے تعارف کرایا۔

ادھر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور افغان وزیر خارجہ کی ملاقات ہوئی جس میں دو طرفہ تعلقات، مفاہمتی عمل اور علاقائی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

افغان وزیر خارجہ سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان نے افغانستان میں دیرپا امن کیلئے مخلصانہ کوششیں کی ہیں ، وزیراعظم کا مؤقف ہے کہ افغان مسئلے کو طاقت سے حل نہیں کیا جاسکتا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان خطے میں دیرپا امن و استحکام کا حامی ہے۔ خطے میں امن و استحکام افغانستان میں امن سے مشروط ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ افغان شہریوں کی سہولت کیلئے نئی ویزہ پالیسی کا اجرا کیا گیا ہے۔

ادھر وزیر اطلاعات شبلی فراز کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کا دورہ افغانستان دو طرفہ تعلقات اور روابط کے فروغ میں اہم پیش رفت ہے۔ دونوں ممالک کے عوام بھائی چارے کے رشتے میں بندھے ہیں۔

شبلی فراز نے مزید کہا کہ پاکستان اور افغانستان کے عوام نے دہشت گردی کیخلاف عظیم قربانیاں دیں۔ امن، ترقی اور خوشحالی افغان عوام کا حق ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان خطے میں امن کے داعی ہیں۔

خیال رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے افغانستان کا دورہ اشرف غنی کی دعوت پر کیا۔


ای پیپر