Opposition, worry, Azad Kashmir, elections, Sheikh Rasheed
کیپشن:   فائل فوٹو سورس:   
19 نومبر 2020 (13:07) 2020-11-19

کراچی: وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہا ہے کہ گلگت میں بہت بہترین الیکشن ہوئے ہیں ، اپوزیشن آزاد کشمیر کے الیکشن کی فکر کرے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ گلگت میں بہت بہترین الیکشن ہوئے ہیں، اگر اپوزیشن گلگت کے الیکشن کو نہیں مانتی تو کسی کو نہیں مانا جاسکتا، انہوں نے کہا کہ گلگت میں دوتہائی اکثریت سے حکومت بنائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ کراچی میں 46 کلومیٹر پر ٹرین چلا رہے ہیں، سرکلر ریلوے کا کریہ 30 روپے ہوگا۔ مزدور طبقہ 750 روپے ماہانہ کارڈ کے ذریعے سفر کرسکے گا۔ وزیر ریلوے نے کہا کہ اس منصوبے کا کریڈٹ چیف جسٹس، عمران خان، سندھ حکومت اور پاکستان ریلوے کے ملازمین کو جاتا ہے۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ کراچی کو بے پناہ مسائل کا سامنا ہے، ایک سال میں کے سی آر کو مکمل تیار کر دیں گے، کراچی میں کسی سیاسی جماعت کی طرف سے حمایت نہیں ملی۔ کے سی آر کے راستے میں قبضہ مافیا موجود ہے۔ ایک سال تک تمام راستے کلیئر کرا دیئے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ نے جو حکم دیا ہے اسے کلیئر کرانے کی کوشش کر رہے ہیں، 25 سال پہلے کی زمین پر قبضہ مافیا نے گھر ، پلازے اور مارکیٹس بنا دیں، اللہ سے امید ہے جس کام کا بیڑا چیف جسٹس نے اٹھایا تھا اسے جلد مکمل کریں۔

پاکستان ریلوے 40 کوچز بنا رہی ہے، سندھ گورنمنٹ نے ایف ڈبلیو او کو ٹینڈر دیدیا ہے۔ جس وقت یہ پل بن گئے پاکستان ریلوے وہاں تک پہنچ جائے گی۔

وزیر ریلوے نے کہا کہ کام کرنا بہت مشکل ہے، تمام مشکلات کے باوجود کام جاری ہے۔ کے سی آر کیلئے 12 پھاٹک لگائے جائیں گے، 15 روز میں 12 پھاٹک لگا دیں گے تاکہ کوئی نقصان نہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے اوور برج اور انڈر برجز کے ٹھیکے دے دیئے ہیں، سندھ حکومت کا جیسے جیسے کام مکمل ہوگا ہم اپنا کام کرتے جائیں گے۔

شیخ رشید نے کہا کہ کراچی میں زمینوں پر اتنا قبضہ ہے ایک زمین بیچیں تو ریلوے کا قرضہ ختم ہو جاتا ہے۔ ریل چلتی رہے تو بہتر رہتا ہے رک جائے تو نقصان ہونے لگتا ہے۔


ای پیپر