Corona's second wave increased by 400%,died 18 more people
19 نومبر 2020 (10:42) 2020-11-19

اسلام آباد: پاکستان میں کورونا وائرس کی دوسری لہر میں 400 فیصد تک اضافہ ہو چکا ہے جبکہ ملک بھر میں 24 گھنٹے کے دوران مزید 18 افراد وائرس سے لقمہ اجل بن گئے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کی جانب سے جاری اعدادوشمار کے مطابق جاں بحق افراد کی تعداد 7ہزار248ہوگئی۔ 2ہزار 547نئے کیسز رپورٹ ہو ئے جبکہ متاثرہ افراد کی تعداد 3لاکھ 65ہزار927ہوگئی۔ اس وقت ایکٹیو کیسز کی تعداد 32 ہزار پانچ ہے۔

این سی او سی نے کرونا کے بڑھتے کیسز کے مد نظر شادی ہالزسے متعلق اہم فیصلے کرلئے اورآئوٹ ڈورتقریبات کیلئے 300سے زائدافرادکی شرکت پرپابندی،ایس اوپیزپرعملدرآمدکرانامنتظمین کی ذمہ داری جبکہ خلاف وزری پرانتظامیہ کیخلاف کارروائی ہوگی۔

اسلام آبادہائیکورٹ نے این سی اوسی کے فیصلوں کی توثیق کردی۔ کورونا کے زیادہ کیسز پازیٹو آنے پر ضلعی انتظامیہ نے پنجاب حکومت کو سمارٹ لاک ڈاﺅن کی تجاویز بھجوا دیں جبکہ لاہور کے مزید 14علاقوں میں سمارٹ لاک ڈاون لگانے کی تجویز دے دی گئی ہے۔

 آزاد جموں و کشمیر حکومت نے 22 نومبر سے وادی میں 2 ہفتوں کے لیے دوبارہ لاک ڈائون نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

آزاد کشمیر میں 5690 کنفرم کیسز، 1348 ایکٹو کیسز جبکہ 132 اموات رپورٹ ہو چکی ہیں۔ صوبہ بلوچستان کی بات کی جائے تو وہاں 16582 کنفرم کیسز، 483 ایکٹو اور 157 افراد موت کی وادی میں جا چکے ہیں۔

این سی او سی کے مطابق گلگت بلتستان میں اس وقت 4482 کنفرم کیسز موجود ہیں۔ ملک کے دیگر علاقوں کی بات کی جائے تو اسلام آباد 25278، خیبر پختونخوا 43052، صوبہ پنجاب 112284 اور صوبہ سندھ میں 158559 کنفرم کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

اس وقت گلگت بلتستان میں 145، اسلام آباد میں 4099، خیبر پختونخوا میں 2272، صوبہ پنجاب میں 11919 اور سندھ میں 11739 ایکٹو کیسز ہیں۔ اس موذی مرض کے ہاتھوں جان کی بازی ہارنے والوں میں سندھ کے 2764، پنجاب کے 2519، خیبر پختونخوا کے 1318، اسلام آباد کے 265، گلگت بلتستان کے 93، بلوچستان کے 157 اور آزاد کشمیر کے 132 شہری شامل ہیں۔


ای پیپر