شہزادہ محمد بن سلمان نے سعودی عرب کو بچایا : شہزادہ ولید بن طلال
19 مارچ 2019 (14:35) 2019-03-19

ریاض: سعودی عرب میں شاہی خاندان میں چپقلش ٗ گرفتاریوں کے بعد اب صورتحال واضح ہونا شروع ہو گئی ہے جب شہزادہ ولید بھی طلال نے ایک اہم انٹرویو میں یہ انکشاف کیا ہے کہ سعودی ریاست معاشی بدحالی کے کنارے پر پہنچ چکی تھی اور اگر شہزادہ محمد بن سلمان اپنی ذہانت استعمال نہ کرتے تو سعودی عرب معاشی بدحالی کا شکار ہو سکتا تھا۔

طویل عرصے کی خاموشی کے بعد خلیجی ٹی وی کو ایک انٹرویو میں شہزادہ ولید بن طلال نے کہا کہ وہ اس معاشی بدحالی کے بارے میں شاہ عبداللہ کو خط لکھا کرنے تھے لیکن ان تک کوئی بھی تحریر نہ پہنچ سکی۔ اس موقع پر میری مدد کیلئے شہزادہ محمد بن سلمان آئے انہوں نے میرا خط شہزادہ سلمان تک پہنچایا ۔

شہزادہ ولید نے کہا کہ محمد بن سلمان وہ دماغ ہیں جنہوں نے سعودی عرب کے معاشی حالات کو سہارا دیا۔ انہوں نے جو انقلابی اقدامات کئے  وہ میرے خطوط میں لکھے مطالبات سے بہت زیادہ ہیں۔ آج میرے تعلقات موجودہ سعودی قیادت کے ساتھ بہت اچھے ہیں۔جمال خاشقجی کے بارے میں شہزادہ ولید نے کہا کہ ان کے ساتھ انہوں نے 5 سال تک کام کیا ٗ وہ اچھے دوست تھے مگر اس سارے معاملے کو مغرب نے الگ ہی رنگ میں پیش کیا جو ہوا وہ دوبارہ نہیں ہونا چاہیے۔ 


ای پیپر