جس طرح چین نے بھارت کو سبق سکھایا وہ یاد رکھے گا،مشاہد حسین سید
19 جون 2020 (17:54) 2020-06-19

اسلام آباد:سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خارجہ کے چیئرمین سینیٹر مشاہد حسین سید نے کہا ہے کہ جس طرح چین نے بھارت کو سبق سکھایا بھارت یاد رکھے گا.

بھارت کو اقوام متحدہ میں واک اوور دیاگیا ،وہ سلامتی کونسل کارکن بن گیا، ایک دفعہ بھی ہم نے مخالفت بھی نہیں کی اعتراض بھی نہیں اٹھایا،دو ہفتے پہلے پاکستان ٹیلی ویڑن میں نقشہ آگیا ہمارا کشمیر بھارت کا کشمیر بنا دیا گیا، پتہ نہیں کس طریقے سے بنایا گیا ہمیں ابھی تک اس کی انکوائری نہیں ملی، اس حکومت میں مافیاز کا اضافہ ہو رہا ہے،اب تیل کا بھی مافیا آگیا ہے وہ کہاں سے آیاہے، وہ باہر سے تو نہیں آیا۔

جمعہ کو سینیٹ اجلاس میں بجٹ پر بحث کرتے ہوئے سینیٹر مشاہد حسین سید نے کہا کہ پانچ جون کو ایوان نے ایک قرار داد متفقہ طور پر منظور کی تھی جو کہ مسئلہ کشمیر اور چین بھارت ٹینشن سے متعلق تھی ، ہم نے رائٹ پوزیشن لی، جس طرح چین نے بھارت کو سبق سکھایا بھارت یاد رکھے گا، مشاہد حسین سید نے بجٹ پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ہر بجٹ کی بنیاد ریونیو پلان ہوتی ہے، پچھلے سال جو بجٹ بنایا گیا انہوں(حکومت) نے کہاکہ ماضی کی حکومت کی وجہ سے گڑبڑ ہوئی، اس سال جو بجٹ آیا انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے تباہی ہوئی، گردشی قرضہ ریکارڈ 1.8 ٹریلین پر ہے.

مشاہد حسین سید نے کہا کہ بجٹ دستاویز میں مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کا کوئی پلان نظر نہیں آیا، بھارت کو اقوام متحدہ میں واک اوور دیاگیا ،وہ سلامتی کونسل کارکن بن گیا، ایک دفعہ بھی ہم نے مخالفت بھی نہیں کی اعتراض بھی نہیں اٹھایا،مشاہدحسین سید نے کہا کہ دو ہفتے پہلے پاکستان ٹیلی ویڑن میں نقشہ آگیا ہمارا کشمیر بھارت کا کشمیر بنا دیا گیا، پتہ نہیں کس طریقے سے بنایا گیا ہمیں ابھی تک اس کی انکوائری نہیں ملی ، پھر وزیر اعظم نے خود آفر کیا کہ احساس پروگرام کے ذریعے ہم بھارت کی مدد کر سکتے ہیں ایک طرف مودی کو آفر کررہے ہیں کہ ہم آپ کی مدد کریں گے دوسری طرف جب وزیراعظم کراچی جاتے ہیں تو وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ سے ملاقات کرنا بھی گوارا نہیں کرتے.

مشاہد حسین سید نے کہا کہ اس حکومت میں مافیاز کا اضافہ ہو رہا ہے،اب تیل کا بھی مافیا آگیا ہے وہ کہاں سے آیاہے، وہ باہر سے تو نہیں آیا ، مشاہد حسین سید نے کہا کہ 18ویں ترمیم پر بحث کایہ وقت غلط ہے، این ایف سی کی بات ہو رہی ہے، صوبوں کا حق نہیں مارنا چاہیئے، مشاہد حسین سید نے کہا کہ ٹائیگر فورس پیپر ٹائیگرز ہیں،ابھی تک کورونا پر غلط پیغام دیا گیا ہے، ٹڈی دل کی وجہ سے 40فیصد فصلیں تباہ ہو گئیں ہیں ، تین مہینے ہو گئے ہیں کنسٹرکشن کا پیکج دیا گیاہے سیمنٹ کی سیل 37 فیصد کم ہو گئی ہے۔


ای پیپر