Hareem Shah new story
19 جنوری 2021 (15:34) 2021-01-19

کراچی :مفتی عبدالقوی نے حریم شاہ کے تھپڑمارنے والی ویڈیو کی اصل کہانی سے پردہ اُٹھا دیا ،مفتی عبد القوی کا کہنا تھا کہ حقیقت میں حریم شاہ نے انھیں تھپڑ نہیں مارا البتہ ان کی سیکرٹری عائشہ نے حریم شاہ کے کہنے پر انہیں تھپڑ مار ۔

تفصیلات بتاتے ہوئے مفتی عبدالقوی نے مکمل سٹوری بتاتے ہوئے کہا کہ وہ مارننگ شو کے سلسلے میں ایک ٹی وی انتظامیہ کے کہنے پر کراچی پہنچے تھے جہاں انہیں ائیر پورٹ پر جو گاڑی لینے آئی اس میں حریم شاہ اور ان کی سیکرٹری عائشہ موجود تھیں ،میں نے ان کے ساتھ بیٹھنا پسند نہیں کیا اور دوست کی گاڑی میں بیٹھ گیا ،بعد ازاں انہیں خواتین نے مجھے کھانے کی پیشکش کی جس پر میں نے انہیں کلمہ طیبہ پڑھنے کا کہا اور ساتھ ہی ان پر واضح کیا کہ مجھے آپ لوگوں پر یقین نہیں ہے ،ان خواتین نے کلمہ پڑھا اور مجھے شاندار کھانا بھی کھلایا ۔

مفتی عبد القوی کا کہنا تھا کہ ان خواتین نے کھانے کیساتھ چائے بھی پلائی ،جب ہوٹل کے کمرے میں وہ چائے پی رہے تھے تو وہاں حریم شاہ کی سیکرٹری نے انہیں اچانک تھپڑ مارا جس کی ویڈیو حریم شاہ خود بنا رہی تھی ،انہوں نے کہا حریم شاہ سستی شہر ت اور پیسہ کمانے کے چکر میں یہ تمام حرکتیں کر رہی ہے ،کیونکہ حریم شاہ کو معلوم ہے کہ مفتی عبد القوی کیساتھ بنائی گئی ویڈیوز زیادہ وائرل ہوگیں ،یہ ہی وجہ ہے انہوں نے میرے ساتھ اس طرح کی حرکت بھی کی ہے ۔

مفتی عبد القوی کا کہنا تھا کہ حریم شاہ کی اس طرح کی حرکت پر پٹھان قوم بہت مشتعل ہے اور وہ کاروائی چاہتے ہیں ،حریم شاہ کیخلاف قانونی کاروائی کے سوال پر مفتی عبد القوی کا کہنا تھا کہ پٹھان قوم اس وقت مشتعل ہیں لیکن میں نے اپنا معاملہ اللہ پر چھوڑ دیا ہے لیکن وہ قانونی کاروائی چاہتے ہیں ۔


ای پیپر