ahsan iqbal,pti,foreign funding,case,election commission,protest
19 جنوری 2021 (12:37) 2021-01-19

اسلام آباد :مسلم لیگ(ن) کے رہنما احسن اقبال نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کی فنڈنگ کچھ ایسی لابیز نے کیں جن کا تعلق اسرائیل اوربھارت سے بھی ہے۔ پی ٹی آئی نے بیرونی ذرائع سے فنڈنگ کو ہنڈی اور غیر قانونی ذرائع کے ذریعے پاکستان لاکر استعمال کیا۔

ایک ٹی وی انٹرویو میں مسلم لیگ(ن) کے رہنما احسن اقبال نے کہا کہ ایک منتخب وزیر اعظم کیخلاف تو 6 ماہ کے اندر جے آئی ٹی بنا کر اور اقامہ کیس میں انہیں فارغ کر  دیا گیا۔پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس ایک اوپن اینڈ شٹ کیس ہے۔جس کے تمام حقائق اور ثبوت فراہم کردئیے گئے ہیں اور پی ٹی آئی کے اپنے ایک بانی رکن نے فراہم کئے ہیں اور اس کے بعد جو سٹیٹ بنک ہے اس نے تصدیق کر دی ہے کہ درجنوں ایسے اکائونٹس تھے جہاں باہر سے پیسہ آرہا تھا اور ان کو الیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی نے ڈکلیئر نہیں کیا یا دوسرے لفظوں میں ان اکائونٹس کو چھپا کر رکھا گیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ یہ سارے ثبوت بہت عرصے سے الیکشن کمیشن کے سامنے ہیں۔ ان کی سکروٹنی کمیٹی کے سامنے ہیں تو ہم چاہتے ہیں کہ اس کا فوری طور پر فیصلہ ہو تاکہ دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو۔اس میں یہ بات بہت تشویش کی ہےکہ پی ٹی آئی کی فنڈنگ میں کچھ ایسی لابیز نے بھی فنڈنگ کی ہے جن کا تعلق اسرائیل یا بھارت سے ہے۔ اپوزیشن کا الیکشن کمیشن میں جانا صرف ایک علامتی احتجاج ہے اور ہم وہاں جا کر اس بات کو اٹھانا چاہتے ہیں کہ اس کیس کو فوری طور پر حل کیا جائے اورہم امید کرتے ہیں کہ الیکشن کمیشن اپنی غیر جانبداری دکھاتے ہوئے اس کیس کا بہت شفاف انداز میں فیصلہ کرے گا۔ 

احسن اقبال نے کہا کہ پی ٹی آئی نے بیرونی ذرائع سے فنڈنگ بھی لی ہے اور اس کو ہنڈی کے ذریعے ٗ غیر قانونی ذرائع کے ذریعے پاکستان لاکر استعمال کیا اور پھر ان کے بارے میں جھوٹ بھی بولا ہے۔ مسلم لیگ(ن) نے واضح طور پر الیکشن کمیشن کو یہ کہہ رکھا ہے کہ ہم نے کوئی غیر ممنوعہ الیکشن فنڈنگ حاصل نہیں کی اور ہمارے تمام بنک اکائونٹس الیکشن کمیشن کے ساتھ ان کی تفصیلات شیئر کی ہیں۔ یہ پی ٹی آئی کی طرف سے صرف ایک درخواست ہے کہ ہم تو گندے ہیں اس طرح تھوڑا وقت حاصل کر لیا جائے۔ 


ای پیپر