آٹے کے مصنوعی بحران پر ہیلپ لائن قائم کر دی : فردوس عاشق اعوان
19 جنوری 2020 (15:42) 2020-01-19

سیالکوٹ: وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ آٹے کے مصنوعی بحران پر ہیلپ لائن قائم کردی گئی ہے، مہنگا بیچنے والوں کے خلاف ہیلپ لائن پر شکایت درج کروائی جاسکتی ہے، منفی پروپیگنڈے کی روک تھام ضروری ہے، سندھ حکومت نے بروقت گندم کی خریداری نہیں کی،۔ حکومت 814 فلور ملز کو گندم پر سبسڈی دے رہی ہے۔ ملز مالکان کو مہنگا آٹا فروخت کرنے سے روکنے کی ضرورت ہے، مہنگائی میں جان بوجھ کر حصہ بننے والی مافیا کو شکست دینا ہوگی ۔

وزیر اعظم عمران خان کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان نے نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہ آٹے کی سپلائی اور قیمتوں پر منفی پروپیگنڈا کیا جا رہا ہے، پنجاب میں آٹے کے مصنوعی بحران کا معاملہ دیکھنے کا ٹاسک ملا ہے۔منفی پروپیگنڈے کی روک تھام ضروری ہے، سندھ حکومت نے بروقت گندم کی خریداری نہیں کی۔ ملک بھر میں خوراک کی فراہمی وفاقی حکومت کا فرض ہے۔ وفاقی حکومت نے سندھ کو 4 لاکھ ٹن گندم دینے کا فیصلہ کیا تھا۔ 4 میں سے 1 لاکھ ٹن گندم سندھ نے اٹھائی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت فلور ملز تک گندم پہنچانے میں ناکام رہی ہے، سندھ حکومت کو چاہیئے گندم کی سپلائی کے عمل کو تیز کرے۔ وزیر اعظم کی ہدایت پر فاسٹ ٹریک میکنزم متعارف کروایا جا رہا ہے۔ قیمتیں جان بوجھ کر بڑھانے والوں کا سدباب ضروری ہے۔سیل پوائنٹس کے ذریعے قیمتوں میں کمی کے لیے اقدامات کریں گے۔ پنجاب حکومت نے آٹے کی مہنگے داموں فروخت پر کریک ڈا ون کیا ہے۔ حکومت 814 فلور ملز کو گندم پر سبسڈی دے رہی ہے۔ ملز مالکان کو مہنگا آٹا فروخت کرنے سے روکنے کی ضرورت ہے، مہنگائی میں جان بوجھ کر حصہ بننے والی مافیا کو شکست دینا ہوگا۔


ای پیپر