Secular India exposed
19 دسمبر 2020 (22:44) 2020-12-19

 اسلام آباد:عالمی ہیومن فریڈم انڈیکس 2020 رپورٹ کے مطابق بھارت 111 ویں نمبر پر آگیا،بھارت انڈیکس میں اپنی پوزیشن سے 17 نمبر پیچھے چلا گیا۔ 

نیوز ایجنسی دی وائر کے مطابق بھارت ہیومن انڈیکس ریٹنگ میں 6.43 پوائنٹس حاصل کر سکا، یوریج ہیومن فریڈم ریٹنگ 6.93 پوائنٹ ہے، ریٹنگ ایجنسی کیٹو انسٹیٹیوٹ نے کل 162 ممالک کو ریٹ کیا، ذاتی آزادی، یعنی پرسنل فریڈم انڈیکس میں بھارت کو 6.30 ریٹنگ پوائنٹ ملے، اکنامک فریڈم کے شعبہ میں بھارت کو 6.56 ریٹنگ پوائنٹ ملے، بھارت کو پاکستان (140 ) بنگلہ دیش (139) اور چین (129) سے پہلے ریٹ کیا گیا،نیپال (92)، سری لنکا (94) ، اور بھوٹان 108 ریٹنگ پوائنٹس کے ساتھ بھارت سے آگے،ٹاپ ٹین میں ریٹنگ حاصل کرنے والے ممالک میں نیوزی لینڈ، سوئٹزر لینڈ، ہانگ گانگ شامل ہیں ،ڈنمارک، آسٹریلیا، کینیڈا، آئرلینڈ، اسٹونیا، جرمنی اور سویڈن بھی ٹاپ ٹین میں شامل ہیں ۔

ریٹنگ میں نویں پوزیشن پر جرمنی اور سویڈن میں مقابلہ برابر رہا،جاپان ریٹنگ میں 11ویں اور برطانیہ اور امریکہ 17 ویں نمبر پر موجود ہیں،شام ریٹنگ لسٹ میں بدترین ملک رہا،سوڈان، وینزویلا، یمن اور ایران اسی ترتیب سے بدترین ہیومن انڈیکس والے ملکوں میں شامل ہیں ،انڈیکس ذاتی اور معاشی شعبوں سمیت 17 اشاریوں کی بنیاد پر تشکیل دیا گیا ۔دی وائر کے مطابق قانون کی حکمرانی، سکیو رٹی، اور سیفٹی بھی انڈیکس کی ترتیب کے اشاریوں کی بنیا دتھے،مذہب، لیگل سسٹم، حق جائداد اور پیسہ تک رسائی بھی انڈیکس کے لئے زیر غور رہے۔


ای پیپر