فوٹوبشکریہ فیس بک

آر ٹی ایس سسٹم بیٹھا نہیں تھا شب خون مارا گیا تھا: حمزہ شہباز
19 اگست 2018 (16:00) 2018-08-19

لاہور: پی ٹی آئی کے عثمان بزدار سے وزیراعلیٰ پنجاب کا الیکشن ہارنے والے اور پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما حمزہ شہباز شریف نے کہا ہے کہ دکھی دل سے کہتا ہوں کہ آج کے مینڈیٹ میں دھاندلی کی ملاوٹ ہے، 21 ارب روپے میرے یا آپ کے نہیں، عوام کے تھے، آر ٹی ایس سسٹم بیٹھا نہیں تھا شب خون مارا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی میں وزیراعلیٰ کے انتخاب کے بعد ایوان سے خطاب کرتے ہوئے حمزہ شہباز شریف نے کہا کہ جو بھی بات کروں گا اخلاق کے دائرے میں رہ کر کروں گا، اقتدار آنے جانے کی چیز ہے، ہمیں اس کی خواہش نہیں، الیکشن کمیشن کے بے پناہ اختیارات ہیں۔

رکن اسمبلی نے اعتراف کیا کہ ماضی میں ہم سب سے غلطیاں ہوئی ہیں، ایوان میں بیٹھا ہر نمائندہ معزز ہے جبکہ تیسری حکومت ہے جو تسلسل سے جمہوری نظام کے تحت وجود میں آئی۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں تمام سیاسی جماعتیں دھاندلی کا شور مچا رہی ہیں جبکہ بیرونی میڈیا میں پاکستان کی جگ ہنسائی دیکھتا ہوں، آغاز اچھا ہونا چاہیے تھا۔

حمزہ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ نگراں حکومت شفاف انتخابات کرانے میں ناکام رہی، انتخابات میں ہمارے پولنگ ایجنٹس کو باہر نکالا گیا، مسلم لیگ ن کی حکومت نے 16 ہزار میگاواٹ بجلی پیدا کی، پاکستان نے بہت قربانیاں دی ہیں، پاکستان کو بہت سے چیلنجز کا سامنا ہے، آج ہمارا دشمن ملک کہتا ہے کہ پاکستان کو پیاسا مارنا ہے، ایسا نہیں ہوگا، کچھی کینال کا ذکر کروں گا کیونکہ پانی کی ایک ایک بوند قیمتی ہے۔

100 ارب روپے خرچ کرکے بھاشا ڈیم کیلئے زمین خریدی جبکہ کالا باغ ڈیم سیاست کی نذر ہوگیا۔ حمزہ شہباز شریف نے کہا کہ کرپشن ثابت نہ ہونے کے باوجود نواز شریف کو سزا سنائی گئی جبکہ انہو ں نے اندھیرے ختم کرنے کا بیڑہ اٹھایا تھا، کالا باغ ڈیم نہ بننے سے ملک کو نقصان پہنچ رہا ہے اور میں آج بھی کہتا ہوں کالا باغ ڈیم بننا چاہیے۔

 

 

 

 

 

 

 


ای پیپر