Citizens are making a big mistake by not following SOPs, says Federal Minister
کیپشن:   فائل فوٹو
19 اپریل 2021 (14:17) 2021-04-19

اسلام آباد: نیشنل کمانڈ آپریشن سینٹر کے سربراہ اسد عمر نے کورونا کی بگڑتی ہوئی صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہری ایس او پیز پر عمل نہ کرکے بہت بڑی غلطی کر رہے ہیں۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری بیان میں اسد عمر کا کہنا تھا کہ عالمی سطح پر کورونا کے روزانہ 7 لاکھ 50 ہزار کیسز جبکہ 13 ہزار سے زائد اموات ہو رہی ہیں۔ کورونا کیسز سے متعلق ہمسایہ ملک برے حالات میں ہے۔

وفاقی وزیر اسد عمر کا کہنا تھا کہ ایران 300 جبکہ بھارت میں روزانہ 1600 اموات ہو رہی ہیں۔ ہمیں آج پاکستان میں اس وقت پہلے سے کہیں زیادہ حفاظت اور احتیاطی اقدامات کی ضرورت ہے۔

انہوں نے عوام کو خطرات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں کورونا کیسز میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ کورونا کیسز میں اضافے کے باعث ہسپتالوں پر دباوَ بڑھ رہا ہے۔ تشویشناک مریضوں میں گزشتہ سال جون کے مقابلے 30 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہسپتالوں میں آکسیجن سپلائی کرنے کا دباوَ بڑھ رہا ہے۔ شہری ایس او پیز پر عمل نہ کرکے بہت بڑی غلطی کر رہے ہیں۔ ملک میں کورونا کے تشویشناک مریضوں کی تعداد 4500 سے بڑھ گئی ہے۔

خیال رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس نے اپنے پنجے مکمل طور پر گاڑ لئے ہیں۔ صوبہ پنجاب کے حالات خاص طور پر دگرگوں ہیں۔ یہاں موذی مرض سے شرح اموات اور کورونا کے کیسز میں روز بروز اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے لیکن شہری ایس او پیز کو نظر انداز کر رہے ہیں۔

عوام کی بے احتیاطی جاری رہی تو خدشہ ہے کہ کورونا وائرس پاکستان میں خطرناک صحت عامہ کے بحران کو جنم دے سکتا ہے۔


ای پیپر