With the blessings of Ramadan, my father was released, Lalu Prasad Yadav's daughter believes
کیپشن:   فائل فوٹو
19 اپریل 2021 (10:22) 2021-04-19

بہار: بھارت کے ممتاز سیاستدان لالو پرساد یادیو کی صاحبزادی کو یقین ہے کہ رمضان المبارک کی برکت کی وجہ سے ہی ان کے والد کو عدالت کی جانب سے ضمانت ملی ہے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری بیان میں نے لکھا کہ میں نے منت مانی تھی کہ میں اپنے والد کی ضمانت پر رہائی کیلئے پورے رمضان المبارک میں روزے رکھوں گی۔

لالو پرساد کی صاحبزادی روہنی آچاریہ نے لکھا کہ مجھے اوپر والے سے عیدی مل چکی ہے، میرا رمضان کامیاب رہا۔

خیال رہے کہ انڈین ریاست بہار کے سابق وزیراعلیٰ لالو پرساد یادیو ساڑھے تین سالوں سے جیل میں قید تھے، جنھیں گزشتہ دنوں جھاڑکھنڈ کی عدالت عالیہ کی جانب سے ضمانت دیدی گئی ہے۔

لالو پرساد یادیو کو چارہ کرپشن کے ایک کیس میں مجرم قرار دے کر سزا سنا دی گئی تھی، وہ 2018ء سے جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہیں۔ ضمانت کے بعد ان کی جلد رہائی کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔

بھارت کے معروف سیاستدان لالو پرساد یادیو کی ضمانت کی خبر تو اہم ہے ہی لیکن میڈیا کی توجہ جس نے حاصل کی وہ ان کی صاحبزادی روہنی آچاریہ ہیں جنہوں نے اعلان کیا تھا کہ وہ اپنے والد کی جیل سے رہائی، انصاف کی جلد فراہمی اور ان کی جلد صحتیابی کیلئے ماہ رمضان المبارک کے پورے روزے رکھوں گی۔

روہنی آچاریہ نے اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ میں روزے رکھ کر میں اللہ تعالیٰ سے دعا کرونگی کہ وہ میرے والد کو جلد صحت عطا کرے۔ خیال رہے کہ لالو پرساد یادیو کی صاحبزادی ان دنوں اپنے خاوند کیساتھ سنگاپور میں مقیم ہیں، ان کے تین بچے ہیں۔

ہندو انتہا پسندوں کی جانب سے روہنی آچاریہ کی اس ٹویٹ پر انھیں سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے دھمکیاں دی جا رہی ہیں کہ وہ اپنے نظریات پر غور کریں اور سوچ سمجھ کر ایسے الفاظ ادا کیا کریں، ان کے اس اقدام سے کروڑوں ہندوؤں کے مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچی ہے۔


ای پیپر