Nasa, Elon Musk, SpaceX, spacecraft, humans, moon
19 اپریل 2021 (08:22) 2021-04-19

نیو یارک: امریکی خلائی ادارے ناسا نے انسان کو چاند پر لے جانے کے لیے خلائی جہاز بنانے کی ذمہ داری خلائی ٹرانسپورٹیشن کمپنی اسپیس ایکس کو دی ہے ۔

قریب تین ارب ڈالرز کے معاہدے کے تحت اسپیس ایکس ایک ایسا خلائی جہاز تیار کرے گا ، جو پہلی مرتبہ ایک خاتون اور ایک مرد کو چاند کی سطح تک پہنچائے گا ۔ ناسا کے مطابق یہ مشن رواں دہائی کے آخر تک ممکن ہوسکتا ہے ۔

خیال رہے کہ گزشتہ کئی دہائیوں سے کسی خلاباز نے چاند کی سطح پر قدم نہیں رکھا ۔ اب یہ ذمہ داری اسپیس ایکس کو سونپ دی گئی ہے کہ وہ انسانوں کو چاند کی سطح پر لے جائے ۔

اس سے قبل خلائی کمپنی اسپیس ایکس نے تیز ترین انٹرنیٹ سروس 'اسٹار لنک ٹرمینل کِٹ' کی قیمت قریب پانچ سو ڈالر کرنے کا اعلان کیا تھا ۔

اس حوالے سے اسپیس ایکس کے صدر گیوین شاٹ ویل نے کہا کہ ایر اسپیس کمپنی نے ہر اسٹار لنک ٹرمینل کی لاگت 3000 ڈالر سے گھٹا کر 15 سو ڈالر کر دی ہے ۔

سٹار لنک صارفین کو کٹ کے لیے 499 ڈالر ادا کرنے پڑیں گے جس میں صارف ٹرمینل بھی شامل ہے جسے ڈشے کے نام سے جانا جاتا ہے ۔ اس بات کی نشاندہی کرتے ہیں کہ اسپیس ایکس 1 ہزار ڈالر سے ہر ایک کیلئے باقی لاگت کا احاطہ کرتا ہے ۔


ای پیپر