فوٹوبشکریہ فیس بک

قومی اسمبلی میں منی بجٹ آج پیش کیا جائے گا
18 ستمبر 2018 (09:35) 2018-09-18

اسلام آباد: نئی حکومت نے نیا بجٹ لانے کا پلان بنا لیا، قومی اسمبلی میں منی بجٹ آج پیش کیا جائے گا۔

اجلاس سے پہلے فنانس بل کی کابینہ سے منظوری لی جائے گی 5 ہزار مختلف اشیا پر ڈیوٹی بڑھائے جانے کا امکان سامنے آگیا جس کے بعد مہنگائی کا نیا طوفان آنے کا خدشہ ہے۔ پرتعیش اشیا پر بھی ریگولیٹری ڈیوٹی بڑھائی جاسکتی ہے۔

400 امپورٹڈ اشیا پر ڈیوٹی بڑھنے سے اے سی، فریج، ڈیپ فریزر اور ایل ای ڈیز سمیت الیکٹرونکس کا سامان بھی مہنگا ہوسکتا ہے۔ خواتین کیلئے بھی اچھی خبر نہیں، میک اپ کا سامان، بالوں کے سنوارنے کے آلات، کریم، شیمپو، ٹانک، فیس کریم، فیس پاؤڈر مہنگا کیا جا رہا ہے۔

حکومت کا مالی سال 19-2018 کے فنانس بل میں بڑی ترامیم لانے کا فیصلہ۔ ٹیکس ریونیو بڑھانے کے لیے فنانس بل میں تجاویز پیش کی جائیں گی۔

آمدن پر ٹیکس میں چھوٹ کی حد کم ہوئی تو تنخواہوں میں بھی کمی ہوگی۔ ذرائع کے مطابق گزشتہ حکومت نے 12 لاکھ روپے تک سالانہ آمدن والوں کو انکم ٹیکس سے استثنیٰ دیا تھا لیکن اب وفاقی حکومت اس حد کو کم کرکے 8 لاکھ تک کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

دوسری جانب ایف بی آر حکام کے مطابق فنانس بل میں کی گئی ترامیم ایک وضاحت ہے جو 12 ستمبر کو جاری کی گئی۔


ای پیپر