Image Source : Facebook

ہسپتالوں کی بہتری کیلئے وزیر اعظم عمران خان نے زبردست اعلان کر دیا
18 May 2019 (22:24) 2019-05-18

پشاور: وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ خیبر پختونخوا میں میں حکومت کی نئی ریفارمز کے خلاف کچھ ڈاکٹرز مہم چلا رہے ہیں کہ سرکاری ہسپتالوں کی نجکاری کی جارہی ہے جو کہ غلط ہے، سرکاری ہسپتالوں میں غیر معیاری علاج ہورہا ہے ہم صرف ہسپتالوں کی حالت بہتر بنانا چاہتے ہیںاور انہیں شوکت خانم اسپتال کے برابر لانا چاہتے ہیں ہم بلیک میل نہیں ہوں گے۔

شوکت خانم ہسپتال کی فنڈ ریزنگ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ کینسر کا علاج دنیا کا مہنگا ترین علاج ہے۔ شوکت خانم دنیا کا واحد ہسپتال ہے جو 75 فیصد مریضوں کا مفت علاج کرتا ہے۔ پاکستان میں 90 فیصد مریض کینسر کے علاج کی استطاعت نہیں رکھتے۔ میں 30 سال قبل اپنی والدہ کو کینسر کے علاج کیلئے ملک سے باہر لے کر گیا ۔ ہماری قوم ہمیشہ پچھلے سال سے زیادہ عطیات دیتی ہے ہمارے لوگ کھلے دل کے ہیں غریب سے غریب لوگ بھی عطیات دیتے ہیں یہ لوگ خدا سے ڈرنے والے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ لوگ رمضان مین زیادہ زکوٰة ‘ صدقات اور عطیات دیتے ہیں ‘ ہمارے لوگ بہت مہربان ہیں میں ملک چلانے کیلئے بھی پاسکتان کے عوام سے مدد لوں گا۔ ہم نے جب یہ پراجیکٹ شروع ژکیا تو ہمارے پاس ایک کروڑ روپے تھے جبکہ پراجیکٹ ستر کروڑ روپے کا تھا مگر خدا نے تین سال میں پراجیکٹ مکمل کرکے دیا ۔ ہمیں کہیں بھی رکاوٹ کا سامنا نہیں کرنا پڑا ۔ وزیراعظم نے کہا کہ ایک ہفتے مین سمندر سے گیس کے ذخیرے کا پتہ لگ جائے گا اگر گیس مل گئی تو یہ ذخیرہ 50 برس کیلیے ہماری ضروریات کیلئے کافی ہو گا اور ہمیں باہر سے گیس نہین منگوانی پڑے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ہر کوئی اپنی حیثیت کے مطابق عطیات دیں کیونکہ اللہ تعالیٰ انسان سے اس کی حیثیت کے مطابق سوال کرے گا۔

شوکت خانم خطے کا سب سے بہترین ہسپتال ہے یہاں افغانستان سے بھی لوگ کینسر کے علاج کیلئے آتے ہیں ۔ ہم جلد نئی سہولیات کا افتتاح کررہے ہیں۔ کینسر کا علاج ممکن ہے یہ لاعلاج مرض نہیں ہے صرف جلد تشخیص ضروری ہے۔ ہم نے دنیا کی بہترین مشین لگائی ہے جو چھوٹے سے چھوٹے کینسر کا بھی علاج کر سکتی ہے۔ شوکت خانم لاہور بین الاقوامی سطح کا ہسپتال ہے جو کہ خیراتی بھی ہے میں اپنے داکٹرز کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

وزیراعظم نے کہا کہ کے پی کے میں حکومت کی نئی ریفارمز کے خلاف کچھ ڈاکٹرز مہم چلا رہے ہیں۔ سرکاری ہسپتالوں میں غیر معیاری علاج ہورہا ہے ہم سرکاری ہسپتالوں کو شوکت خانم کے برابر لانا چاہتے ہیں۔ لوگ جھوٹ بول رہے ہیں کہ سرکاری ہسپتالوں کی نجکاری کی جاریہی ہے ہم صرف ہسپتالوں کی حالت بہتر بنانا چاہتے ہیں۔ ہم اپنے مقصد سے پیچھے نہیں ہٹیں گے اور بلیک میل نہیں ہوں گے۔


ای پیپر