بھائی کے قتل کے باوجود جوفرا آرچر کی ورلڈ چیمپئن بننے کیلئے جدوجہد
18 جولائی 2019 (23:26) 2019-07-18

لندن: انگلش ٹیم کے فاسٹ بالر جوفرا آرچر نے بھائی کا قتل ہونے کے باوجود ہمت نہ ہاری اور اپنی ٹیم کو عالمی کپ کا چیمپئن بنا ڈالا۔غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق جس روز انگلینڈ نے ورلڈکپ 2019میں اپنا پہلا میچ کھیلا اسی روز آرچر کے بھائی بلیک مین کو گھر کے باہر نامعلوم افراد گولی مار کرچلے گئے تھے۔

تفصیلات کے مطابق 24 سالہ ایشنٹیو بلیک مین کو بارباڈوس میں گھر کے باہر قتل کیا گیا البتہ اہل خانہ نے آرچر کو بھائی کے قتل کی اطلاع میچ کے بعد دی تاکہ ان کی میچ میں کارکردگی متاثر نہ ہو۔ آرچر بھائی کے قتل کی خبر سننے کے بعد صدمے میں چلے گئے تھے البتہ ان کے والد فرینک نے حوصلہ دیا اور کہا کہ یہ موقع انہیں زندگی میں دوبارہ میسر نہیں ہوگا لہذا اپنے دکھ اور کرب کی حالت سے باہر نکل کر ایونٹ پر دھیان دیں۔

فرینک نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ایشنٹیو اور آرچر ہم عمر تھے اور دونوں ایک دوسرے کے اچھے دوست بھی تھے، جوفرا کو جب اس واقعے کی اطلاع ملی تو وہ ٹوٹ گیا تھا البتہ ٹیم مینیجمنٹ اور ساتھی کھلاڑیوں نے اس کی ہمت بڑھائی۔والد کے مطابق بلیک مین کو گھر کے باہر 31 مئی کے روز قتل کیا گیا اور اس روز انگلینڈ ورلڈکپ میں اپنا میچ کھیل رہا تھا، حملہ آوروں نے بیٹے کو 8 گولیاں ماریں جس کی وجہ سے وہ ہلاک ہوئے۔


ای پیپر