Reko Diq case, Pakistan, billions, dollars, PIA, UK court
18 جنوری 2021 (13:33) 2021-01-18

اسلام آباد: پاکستان کو اربوں ڈالر کے منجمد اثاثے بچانے کیلئے ایک اور موقع مل گیا۔ ریکوڈک کے اربوں ڈالر کے مقدمے میں پی آئی اے کے اثاثوں پر سماعت آج لندن میں ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پہلی بار وکلا کے پینل کے ذریعے منجمد اثاثوں کی بحالی کے لیے درخواست دائر کرے گا۔ برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق برٹش ورجن آئی لینڈ کی عدالت میں ریکوڈک مقدمہ ہارنے کے بعد پاکستان کو چھ ارب ڈالر تک کے جرمانے کا سامنا ہے۔

خیال رہے کہ عدالت نے نیویارک کے روزویلٹ ہوٹل اور پیرس کے سکرائب ہوٹل سمیت پی آئی اے کی ملکیت تین کمپنیوں کے شیئرز کو آسٹریلوی ٹیتھان کاپر کمپنی کی درخواست پر سات جنوری کو منجمد کر دیا تھا۔

واضح رہے کہ پاکستانی حکام نے اب ان اثاثوں کو بچانے کے لیے کوششیں تیز کر دی ہیں۔ سات جنوری کو اثاثے منجمد کرنے کے فیصلے کے وقت پاکستان اور پی آئی اے کی نمائندگی کرنے کے لیے عدالت میں کوئی نمائندہ موجود نہیں تھا۔ تاہم اس فورم نے پاکستان کو اب حقِ سماعت دیا ہے۔

پاکستانی حکام نے برطانوی نشریاتی ادارے کو بتایا کہ اس بار ہونے والی سماعت میں پاکستان کی نمائندگی وکلا کا ایک پینل کرے گا جو نہ صرف حکومتِ پاکستان بلکہ پی آئی اے کے وکلا پر مشتمل ہو گا۔


ای پیپر