پاکستان کو دہشت گرد کارروائی سے جوڑنا غلط ہے: چین
18 فروری 2019 (19:40) 2019-02-18

بیجنگ: چین نے کہا ہے کہ پاکستان کو بغیر ثبوت کے مقبوضہ کشمیر میں دہشتگردکارروائی سے جوڑنا غلط ہے ، چین اسکی سخت مذمت کرتا ہے ، دہشت گردی عالمی مسئلہ ہے ، ۔ چین ہر قسم کی دہشتگردی کی مخالفت کرتا ہے ۔مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے حملے میں ایک دہشتگرد تنظیم ’’جیش محمد‘‘نے ذمہ داری قبول کر لی ہے ۔دہشتگردی کی زد میں متعدد ممالک ہیں یہ کہنا غیر مناسب ہے کہ دہشتگردی میں پاکستان ملوث ہے ۔

چین کے ریاستی اخبار گلوبل ٹائمز میں شائع ہونے والی رپورٹ میں کیا گیا ہے ۔معروف چینی اخبار ’’گلوبل ٹائمز‘‘کے سربراہ نے پاکستان بارے دہشتگردی خبر کی مذمت کرتے ہوئے بھارتی میڈیا کو آئنہ دکھا دیا ہے ،بھارت بغیر ثبوت کے پاکستان کو دہشتگردکارروائیوں میں ملوث کرنا بند کرے ۔مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے حملے میں دہشتگرد تنظیم ’’جیش محمد‘‘نے ذمہ داری قبول کر لی ہے تو اس کا الزام پاکستان کو دینا غلط ہے ۔رپورٹ کے مطابق کچھ بھارتی تجزیہ کاروں نے اس مجرمانہ حملے کو چین کے ساتھ بھی منسوب کرنے کی کوشش کی ہے ۔

بھارتی تجزیہ کاروں نے چین پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ چین نے ہمیشہ اقوام متحدہ کو مولانا مسعود اظہر پر پابندی لگانے سے روکا ہے ۔ چین نے اس پر کہا کہ دہشت گردی عالمی مسئلہ ہے چین اس کا خود شکار ہے اگر بھارت کے پاس مولانا مسعود اظہر کے خلاف کوئی ٹھوس ثبوت ہے تو اسے سامنے لائے چین ساتھ دینے کو تیار ہے ۔ بلاوجہ کسی پر پابندی عائد نہیں کی جا سکتی۔ چین نے ہمیشہ ہر قسم کی دہشتگردی اور پشت پناہوں کی مخال؛فت کی ہے ۔ چین نے حالیہ برسوں میں اقوا م متحدہ میں کا حق خودارادیت کی حمایت کرتے ہوئے متعدد بار پاکستان اور بھارت کو مسئلہ کشمیر حل کرنے کی تجویز پیش کی۔

رپورٹ کے مطابق چین خود دہشتگردی کا شکار ہونے کے باوجود عالمی برداری کیساتھ دہشتگردی کے خاتمے میں مدد فراہم کرنے کیلئے تیار ہے اور چین نے بھارت سمیت تمام ممالک کو ساتھ مل کر کام کرنے کی دعوت دے رکھی ہے ۔


ای پیپر