Source : Facebook

جے آئی ٹی رپورٹ میں زرداری کیخلاف سنسنی خیز انکشافات ,ثبوت مل گئے
18 دسمبر 2018 (23:46) 2018-12-18

کراچی :کرپشن کی کہانیوں میں اب تک کا سب سے بھیانک انکشاف ،اومنی گروپ سکینڈل کے حوالے سے جی آئی ٹی نے اپنی رپورٹ تیار کر لی جس کے مطابق اربوں روپے کی کرپشن سامنے آئی ہے ۔

جے آئی ٹی کی رپورٹ آصف زرداری اور فریال تالپور کیلئے انتہائی بدترین خبرہے ،بلکہ اگر یوں کہا جائے کہ پوری پیپلزپارٹی کیلئے ایک بہت بڑا دھچکا ہے تو غلط نہ ہوگا ۔

تفصیلات کے مطابق جے آئی ٹی کی یہ رپورٹ 24دسمبر کو سپریم کورٹ میں جمع ہونی ہے ، اب تک بینکنگ کورٹ کی طر ف سے زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور ضمانت پر ہیں ان کی ضمانتوں میںاب تک دو سے تین دفعہ توسیع ہو چکی ہے ،سیاسی مبصرین کے مطابق یہ رپورٹ پیپلزپارٹی قیادت کیلئے انہتائی الارمنگ ہے اور یہ رپورٹ پیپلزپارٹی کیلئے اس قدر خطرناک ہو سکتی ہے کہ 24دسمبر کو پیشی کے وقت سپریم کورٹ یہ بھی کہہ سکتی ہے کہ ان کو گرفتار کر لیا جائے ۔

جے آئی ٹی رپورٹ کے اندر جو تہلکہ خیز انکشافات کیے گئے ہیں ان کے مطابق سند ھ میں کرپشن کی رقم بے نامی اکاﺅنٹس میں جاتی اور وہاں سے اومنی گروپ کے کاروبار اور اثاثوں میں منتقل ہو تی رہی اور وزیر اعلیٰ سندھ کا اس میں مکمل ہا تھ ہے ، زردری کے دست راست اور ان کے بیٹے اے جی مجید یہ رقم ہنڈی کے ذریعے دبئی منتقل کر تا رہا ،فرانس ،لندن اور کینڈا میں اثاثے بنائے گئے ،تھیلوںمیں روزانہ 5کروڑ کی رقم جایا کر تی تھی ،سیاسی سرپرستی اور مشکوک اکاﺅنٹس اور بینکوں سے 80ارب کے قرضے ،سود کی ادائیگی اور رشوت کی رقم سے کی گئی ،جیل جانے سے قبل اے جی مجید سندھ حکومت چلا رہا تھا ،یہ تمام تر تفصیلات جے آئی ٹی کی رپورٹ میں بیان کیے گئے ہیں۔

جے آئی ٹی کی رپورٹ میں مزید کہا گیا اومنی گروپ بلاول ہاﺅس کے اخراجات اٹھا تا ،بچوں کے سالانہ اخراجات بھی ان ہی اکاﺅنٹس سے کیے جاتے تھے ، جے آئی ٹی منی لانڈرنگ میں 32افراد کیخلاف تحقیقات کر رہی ہے ،جن میں زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور بھی شامل ہیں ،اومنی گروپ سکینڈ ل میں انور مجید اور ان کے بیٹے گرفتار ہیں ،

زیر حراست اومنی گروپ کے چیف فنانشل آفیسر اسلم مسعود نے جدہ سے اپنے ویڈیو بیان میں پاکستانی حکام کو چشم کشا انکشافات کیے ہیں،جس میں حیران کن طوریہ بات سامنے آئی کہ وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ بھی براہ راست اومنی سکینڈ ل میں شامل رہے ہیں ،ان کے مطابق مراد علی شاہ کا آصف علی زرداری کی کرپشن میں چولی دامن کا ساتھ تھا ، جے آئی ٹی کے مطابق مراد علی شاہ سندھ کے پہلے وزیر اعلیٰ تھے جن کو ایک دو نہیں بلکہ ایک ساتھ سات منسٹریز ملی ہوئی تھیں ، جے آئی ٹی نے انکشاف کیا کہسندھ کرپشن میں آصف علی زرداری ،انور مجید اور مراد علی شاہ کا اس تمام معاملے میں چولی دامن کا ساتھ تھا ۔

سال 2008 سے قبل اومنی گروپ کی صر ف ایک شوگر مل اور دو کمپنیاں تھیں اب جے آئی ٹی کے مطابق اومنی گروپ کی 91کمپنیاں ہیں ، جے آئی ٹی کی رپورٹ کے مطابق اومنی گروپ کو مختلف طریقوں سے سبسڈیز دیکر مالی فائدہ پہنچایا گیا ، جے آئی ٹی رپورٹ کے مطابق اومنی گروپ کے ذریعے اربوں روپے کمائے گئے ،اب یہ جے آئی ٹی رپورٹ اگر سپریم کورٹ میں ثابت ہوگئی تو کرپشن کا ایک اور میگا سکینڈل ہو گا ۔


ای پیپر