File Photo

عمران خان نے سینیٹ الیکشن میں بکنے والے پی ٹی آئی اراکین کو بے نقاب کر دیا
18 اپریل 2018 (17:57) 2018-04-18

اسلام آباد :اسلام آباد میں پارٹی رہنماﺅں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان نے سینٹ الیکشن کی حقیقت سے پردہ اُٹھا دیا اور بغیر کسی خوف کے پی ٹی آئی کے بکنے والے اراکین کے نام سامنے لے آئے ، عمران خان کا کہنا تھا کہ دوسری جماعتوں کے بکنے والے اراکین کے نام بھی معلوم ہیں، عمران خان نے سینٹ الیکشن میں تمام پارٹیوں کے بکنے والے اراکین کیخلاف اہم فیصلہ کر لیا ۔ہم نے وعدہ کیا تھا کہ بکنے والوں کو نہیں چھوڑیں گے ۔

تفصیلات کے مطابق عمران خان کا کہنا تھا کہ سینٹ الیکشن میں ووٹ بیچنے والے ارکان کو شوکاز نوٹس دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ تمام ارکان کو اپنی صفائی میں ایک موقع ضرور فراہم کیا جائے گا ۔چیرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ اس بارعام انتخابات میں کسی کو ٹکٹ بیچنے نہیں دوں گا اور اگر ٹکٹ دینے کے لیے کوئی پیسا مانگ رہا ہے تو وہ مجھے بتائیں میں ان کے خلاف کارروائی کروں گا جب کہ اس بار ہر تمام ٹکٹ میریٹ پر دیے جائیں گے اور جب تک میں نہیں کہوں گا کسی کو ٹکٹ جاری نہیں کیا جائے گا لہذا پیسے دینے سے بھی کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔

عمران خان نے سینیٹ الیکشن میں ووٹ بیچنے والے 20 اراکین کے ناموں کا بھی اعلان کیا جن میں نرگس علی، دینا ناز، فوزیہ بی بی ، نسیم حیات، ناگینہ خان شامل ہیں جب کہ مرد اراکین میں سردار ادریس، عبید ، زاہد درانی، عبدالحق، قربان خان ، امجد آفریدی، وجیہہالزمان، بابر سلیم، عارف یوسف، جاوید نسیم ، یاسین خلیل، فیصل زمان اور سمیع اللہ زیب ٹکٹ بیچنے والوں میں شامل ہیں۔

پی ٹی آئی کے 20 اراکین نے پیسے لیے ، بکنے والے اراکین کو نوٹس جاری کر دئیے ہیں اگر شوکاز نوٹس کا جواب نا دیا تو انکے نام نیب کو بھجوا دئیے جائینگے ، الیکشن قریب ہے اور یہ بھی معلوم ہے کہ میرے اس فیصلے سے پارٹی کو نقصان ہوگا ،اسلام آباد میں پارٹی رہنماو¿ں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ سینیٹ ملک کا اہم ترین ادارہ ہے اور ملک میں 30، 40 سال سے سینیٹ الیکشن میں ووٹ بک رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے چیئرمین سینیٹ کے حوالے سے جو کہا اس پر افسوس ہوا، کیا انہیں نہیں پتہ تھا کہ 30 سال سے سینیٹ الیکشن میں ووٹ خریدا جا رہا ہے تو انہوں نے ایکشن کیوں نہیں لیا۔


ای پیپر