آل پارٹیز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف کا اہم بیان 
17 ستمبر 2020 (19:54) 2020-09-17

اسلام آباد :پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا ہے کہ ماضی کی فاش غلطیوں سے ہمیں سیکھنا ہوگا، ماضی پر رونے دھونے سے کوئی فائدہ نہیں، غلطیوں کا اعتراف کرنا چاہیے۔

پاکستان بار کونسل کے زیر اہتمام آل پارٹیز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ قوم معترف ہے کہ بھٹو خاندان نے جمہوریت کے لیے قربانیاں دیں،شہبازشریف کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری کے خاندان نے یقیناً جمہوریت کے لیے جو قربانیاں دیں وہ انتہا کی تھیں،اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ اے پی سی سے پہلے اے پی سی کے انعقاد پر بار کونسل مبارکباد کی مستحق ہے،انھوں نے کہا کہ عدلیہ میں تقرریوں، احتساب اور شخصی آزادیوں کا اہم ترین ایجنڈا رکھا۔

ان کا کہنا تھا کہ اس ملک میں انصاف کے متعلق نشیب و فراز آتے رہے، ان جج کا نام بھی یاد ہوگا جنہوں نے پہلی مرتبہ نظریہ ضرورت کو یاد کروایا،انھوں نے کہا کہ آپ کا کسی بھی قوم سے تعلق ہو لیکن آئین نے سب کو جوڑ رکھا ہے،انھوں نے یہ بھی کہا کہ ہم سے بھی حماقتیں ہوئی ہیں لیکن کب تک تماشا دیکھتے رہیں گے، ماضی سے سبق سیکھنا ہوگا آئین کی توقیر کرنا ہوگی۔لیگی صدر کا کہنا تھا کہ ہم احتساب نہیں انتقام کی چکی سے گزر رہے ہیں۔

شہباز شریف نے کہا کہ احتساب پک اینڈ چوز کے تحت نہیں سب کا بلا امتیاز ہونا چاہیے،وزیراعظم عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ایسا وزیراعظم ہے جسے احساس نہیں کہ ملک کا ہر علاقہ مقدس ہے۔


ای پیپر