چیف جسٹس ثاقب نثار نے عید الفطر اپنے اہلخانہ کے ہمراہ لاہور فائونٹین ہائوس میں گزاری
17 جون 2018 (16:44) 2018-06-17


لاہور : چیف جسٹس آف پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار نے عید الفطر کے روز اپنے اہلخانہ کے ساتھ لاہور کے فاونٹین ہاوس کا دورہ کیا اور وہاں مریضوں سے ملاقات کی ، اس موقع پر انہوں نے خواتین مریضوں میں پرفیوم اور چوڑیاں بھی تقسیم کیں۔


فاؤنٹین ہاؤس کے دورہ کے بعد میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے چیف جسٹس نے کہا کہ ہماری آ نے والی 5 نسلیں مقروض ہو چکی ہیں، ہماری 5 نسلیں جو دنیا میں ابھی نہیں آئیں ہم ان کا حق لے کر کھا چکے ہیں، قرضوں سے نجات کے لئے پوری قوم کو ملکر کام کرنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ جب کوئی کام نہیں کرے گا تو کسی کو قوم کے لئے نکلنا پڑے گا۔ چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا کہ فاؤنٹین ہاؤس نجی سطح پر اتنا کام کر سکتا ہے تو حکومتی ادارے کیوں نہیں ؟ اتنے بہتر انتظامات کسی اور ہسپتال میں نہیں دیکھے، یہاں آکر دلی سکون ملا اور میں ریٹائرمنٹ کے بعد فاؤنٹین ہاؤس کا رکن بننا چاہوں گا۔


میڈیا کے کردار کو سراہتے ہو ئے چیف جسٹس نے کہا کہ میڈیا اسی طرح تعمیری کاموں میں بڑھ چڑھ کر کردار ادا کرے۔ فاونٹین ہاؤس کی جانب سے چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کو یادگاری فن پارہ بھی پیش کیا گیا۔یاد رہے چیف جسٹس پاکستان نے گزشتہ دورے کے دوران عید پر ملنے کا وعدہ کیا تھا جسے انہوں نے پورا کر دیا، چیف جسٹس ثاقب نثار اپنے ساتھ تحائف بھی لائے جو انہوں نے مریضوں میں تقسیم کئے۔


ای پیپر