Maryam Nawaz,Tel Aviv,delegation,tweet,diplomatic relations,Israel
17 دسمبر 2020 (18:41) 2020-12-17

لاہور:مسلم لیگ(ن) کی نائب صدر مریم نواز شریف کی ایک ٹویٹ نے سوشل میڈیا پر نئی بحث کا آغاز کر دیا ہے جہاں مریم نواز نے ایک نیوز ویب سائٹ کی خبر شیئر کی ہے جس کے مطابق ایشیا کا ایک مسلمان ملک جس نے ابھی تک اسرائیل  کے سفارتی تعلقات نہیں اس کا ایک وفد دو ہفتے قبل تل ابیب میں تھا اور اس ملک کے سربراہ کے مشیر نے اس وفد کی سربراہی کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق مریم نواز شریف نے ایک انٹرنیشنل اردو نیوز ویب سائٹ کی خبر شیئر کی ہے جس میں اسرائیلی اخبار ’’ہائیوم‘‘ کا حوالہ دیتے ہوئے ایک خبر  دی گئی ہے کہ ایشیا کے ایک ملک اکثریتی ملک کے وفد نے دو ہفتے قبل اسرائیل کا دورہ کیا ہے۔ اس وفد کی سربراہی اہم مشیر نے کی اور وفد نے تل ابیب میں اہم امور پر اسرائیلی حکام کے ساتھ مذاکرات کئے۔

اسرائیلی اخبار نے لکھا کہ یہ وفد کس ملک سے تعلق رکھتا تھا اس حوالے سے اس لئے کوئی مصدقہ خبر نہیں دی جا رہی کیونکہ ملک کا نام اور وفد میں شامل لوگوں کی شناخت ظاہر کرنے سے مسائل پیدا ہو سکتے ہیں  لیکن اس بارے صرف اتنا بتایا جا سکتا ہے کہ اس ملک کے ساتھ اسرائیل کو سفارتی تعلقات نہیںہیں۔اسرائیلی اخبار کی اس خبر کو ایک امریکی نیوز ویب سائٹ اور پھر بعد ازاں اس کی اردو ویب سائٹ پر بھی پوسٹ کیا گیا اور آج مریم نواز شریف نے اس خبر کو اپنے ٹویٹر اکائونٹ کے ذریعے شیئر کیا ہے۔

یاد رہے کہ اسرائیل اس وقت پوری دنیا میں سفارتی تعلقات کی بحالی کیلئے ایک نئے مشن پر ہے جس میں دنیا کی بڑی طاقتیں اس کا ساتھ دے رہی ہیں۔اسی وجہ سے گزشتہ مہینوں میں بحرین ٗ یو اے ای ٗ سوڈان اور مراکش نے اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات بحال کر لئے ہیں۔


ای پیپر