ہماری گائو ماتا کو کیوں پتھر مارا ؟باپ بیٹے کیساتھ ہندو انتہا پسندوں کا ظالمانہ سلوک 
17 اگست 2020 (17:19) 2020-08-17

جموں : مقبوضہ کشمیر میں گائے کو پتھر مار کر زخمی کرنے کے الزام میں مشتعل ہندو انتہا پسندوں نے مسلمان باپ بیٹے پر بہیمانہ تشدد کرکے شدید زخمی کردیا، پولیس کے آنے پر بھی نہ رکے۔

تفصیلات کے مطابق خود کو دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کے دعویدار کہنے والے بھارت میں ہندو انتہا پسندی اپنے عروج پر ہے، گاؤ رکھشا کے نام پر مسلامنوں پر مظالم کا سلسلہ جاری ہے،اس حوالے سے ایک افسوس ناک واقعہ جموں و کشمیر کے ضلع ریاسی کے ارناس میں پیش آیا جہاں مبینہ گاؤ رکھشوں کے ایک ہجوم نے مسلم باپ اور بیٹے کو لاٹھیوں، لاتوں اور گھونسوں سے پیٹ پیٹ کر زخمی کر دیا۔

ہفتے کو پیش آنے والے اس واقعے کی کئی ویڈیوز سوشل میڈیا پر گردش کر رہی ہیں جو ان غنڈوں نے خود بنوا کر پوسٹ کروائی ہیں۔ پولیس کی پارٹی نے موقع پر پہنچ کر محمد اصغر کو ہجوم کے پنجوں سے چھڑا لیا تاہم اس سے قبل زخمی محمد اصغر کا بیٹا جاوید احمد کسی طرح وہاں سے بھاگنے میں کامیاب ہوگیا تھا۔


ای پیپر