فاروق نائیک، لطیف کھوسہ کو عدالت نہیں جانے دیا گیا: بلاول
کیپشن:   file photo
17 اگست 2020 (11:57) 2020-08-17

اسلام آباد: چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ہمیں دھمکیاں دی جا رہی ہیں اور لائن میں آنے کا کہا جا رہا ہے، ہم کل بھی کسی دباؤ میں نہیں آئے آج اور آئندہ بھی نہیں آئیں گے۔

احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ آج پھر اسلام آباد کو یرغمال بنایا گیا ہے، فاروق نائیک اور لطیف کھوسہ کو عدالت جانے نہیں دیا گیا۔ حکومت کو کس بات کا ڈر ہے جو ایسے ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہے، احتساب عدالت کو آزاد ہونا چاہئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں جعلی اور کٹھ پتلی حکومت نہیں چلے گی، نیب اور عدالتوں پر دباؤ ڈالنے کی کوششیں ناکام ہوں گی اور حکومت کے دباؤ کی وجہ سے ہمارا مؤقف نہیں بدلے گا۔

بلاول نے کہا کہ جمہوریت اور انسانی حقوق پر ہم بیانیہ نہیں بدلیں گے، آپ نے میرے پورے خاندان کو گرفتار کرنا ہے تو کرلیں، 18 ویں ترمیم، 1973 کے آئین پر آنچ نہیں آنے دیں گے۔ پیپلز پارٹی کیلئے 17 اگست کا دن مینگو ڈے ہوتا ہے کیونکہ ضیاء الحق آمریت کی حکومت کا آج آخری دن تھا۔


ای پیپر