کرونا کی ویکسین کس ملک نے تیار کر لی ؟پہلا انسانی تجربہ کب ہوگا؟بڑی خبر
17 اپریل 2020 (18:14) 2020-04-17

لندن: آکسفورڈ یونیورسٹی میں کورونا ویکسین کی تیاری کا انکشاف ہوا ہے، انسانوں پر تجربات کے لیے510 افراد کی رجسٹریشن کی گئی ہے، تجربے کا آغاز آئندہ ہفتے سے کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ کی آکسفورڈ یونیورسٹی کے ماہرین نے کورونا وائرس کی ویکسین تیار کرنے کا دعوی کیا ہے، ان کا کہنا ہے کہ آئندہ ہفتے بڑی کامیابی کیلئے پرامید ہیں۔محققین کے مطابق جانوروں پر کامیاب تجربات کے بعد کورونا وائرس ویکسین کی انسانوں پر آزمائش کے لیے 510 افراد کی رجسٹریشن کی گئی ہے۔

ماہرین کا کہنا ہپے کہ یہ ویکسین آئندہ ہفتے سے لوگوں پر آزمائی جائے گی جس کیلئے مختلف اسپتالوں سے بات چیت ہو رہی ہے، تجربہ کامیاب رہا تویہ ویکسین گرمیوں کے فوری بعد ستمبر تک مارکیٹ میں دستیاب ہوگی۔اس حوالے سے پہلے مرحلے کے تجربے کیلئے 18سے 55سال تک کے 510افراد کو چنا گیا گیا ہے، ان تجربات کی یونیسف کی جانب سے منظوری لی جاچکی ہے۔

دوسری جانب پاکستانی سائنسدان ڈاکٹر عطاالرحمن نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ مجھے نہیں لگتا کہ اگلے دو تین یا چار ماہ میں یہ ویکسین مارکیٹ میں دستیاب ہوگی، ٹرائل کیلئے ایک پراسیس سے گزرنا ہوتا ہے جس میں 6 سے 9 ماہ لگ سکتے ہیں، ان کا کہنا تھا کہ میرے خیال میں ویکسین کیلئے ایک سال کا عرصہ لگ سکتا ہے۔اس کے علاوہ وفاقی وزیرسائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا کہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں سائنسدانوں کے 66 بڑے گروپ ویکسین پر کام کر رہے ہیں، اس کے ٹرائل کیلئے ایک سے ڈیڑھ سال چاہئے ہوتا ہے جس کے بعد ہی یہ مارکیٹ میں آتی ہے۔


ای پیپر