اپوزیشن سے ہر طرح کے کمپرومائز کرنے کے لیے تیار ہیں لیکن !
16 ستمبر 2020 (21:05) 2020-09-16

اسلام آباد :پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہم امید کر رہے تھے کہ جس طرح ہم کورونا سے نکل آئے ہیں اس پر اپوزیشن آج ہماری تعریف کرے گی،لیکن انہوں نے جس طرح کے رویے کا مظاہرہ کیا اس سے ثابت ہوا کہ اپوزیشن اور پاکستان کے مفادات متصادم ہیں۔

وزیراعظم نے الزام لگایا کہ اپوزیشن نے ایف اے ٹی ایف کے حوالے سے قانون سازی پر حکومت کو بلیک میل کرنے کی ہر ممکن کوشش کی۔ایف اے ٹی ایف کے  حوالے سے جو قانون سازی ہوئی ہے۔ سب کو پتہ چلنا چاہیے کہ ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ میں ہماری حکومت میں نہیں آئے۔ بلیک لسٹ ہونے کا مطلب ملک پر پابندیاں لگے گی۔ اس کے نتیجے میں ہماری امپورٹس مہنگی ہوں گے۔

عمران خان نے کہا کہ وہ امید کر رہے تھے کہ کورونا پر اپوزیشن حکومت کی تعریف کرے گی۔ ’عالمی ادارہ صحت کہہ رہا ہے دنیا کو پاکستان سے سیکھینا چاہیے۔ کیسز نیچے جا رہے ہیں،ان کا کہنا تھا کہ آج کے رویے کے بعد اپوزیشن کی لیڈرشپ کے بارے میں ان کے خدشات کو تقویت ملی۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان کا مفاد یہ ہے کہ چوری شدہ پیسہ واپس لایا جائے لیکن اپوزیشن والے اپنا پیسہ بچانے میں لگے ہوئے ہیں۔’ اپوزیشن سے جواب مانگیں تو کہا جاتا ہے کہ سیاسی انتقام لیا جاریا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم اپوزیش سے ہر طرح کے کمپرومائز کرنے کے لیے تیار ہیں۔ ’لیکن ہم کرپشن پر کمپرومائز کسی صورت نہیں کریں گے۔


ای پیپر