عالمی فورمز پر بھارت کو بڑی شکست کا سامنا ،مودی کے خواب چکنا چور
16 ستمبر 2020 (19:26) 2020-09-16

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت اپنے جارحانہ رویے کی وجہ سے بین الاقوامی فورمز پر اپنی ساکھ کھو رہا ہے وزیر خارجہ کی یہ رائے ایسے وقت میں سامنے آئی جب ایک روز قبل بھارتی قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈووال نے وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے قومی سلامتی معید یوسف کے شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) کے آن لائن اجلاس میں تقریر کے دوران پاکستان کا سیاسی نقشہ دکھائے جانے پر احتجاج کیا تھا تاہم فورم نے ان کے احتجاج کو مسترد کردیا تھا۔

معید یوسف کے دفتر کی جانب سے ایک بیان میں کہا گیا کہ بھارت کے پاکستان کے نئے سیاسی نقشہ کو مسترد کرنے اور اس پر باضابطہ اعتراض کو مسترد کردیا گیا اور نیا پاکستانی نقشہ معید یوسف کے پس پشت آویزاں رہا‘ رپورٹ کے مطابق آج جاری کردہ بیان میں وزیر خارجہ قریشی نے کہا کہ اجلاس میں پاکستان کے سیاسی نقشہ پر بھارتی اعتراض کو مسترد کردیا گیا جس کی وجہ سے دہلی شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا نہوں نے کہا کہ اس اجلاس کے میزبان روس نے بھارت کے نقطہ نظر کو قبول نہیں کیا، بھارت نے پلیٹ فارم پر یہ مسئلہ اٹھا کر تنظیم کے قواعد کی خلاف ورزی کی ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر ایک بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ متنازع علاقہ ہے اور اس مسئلے کے بارے میں اقوام متحدہ کی قراردادیں موجود ہیں‘انہوں نے کہا کہ چین نے بھی لداخ میں ڈی فیکٹو بارڈر پر بات چیت کے ذریعے بار بار بھارت کے ساتھ معاملات حل کرنے کی پیش کش کی تھی مگر بھارت نے جارحانہ انداز اپنایا اور اسے ذلت کا سامنا کرنا پڑا۔

انہوں نے کہا کہ چین نے بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیا ہے‘بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق بھارتی قومی سلامتی کے مشیر کے واک آؤٹ کے بعد بھارتی وزارت خارجہ نے بیان جاری کیا اور کہا کہ پاکستان کے نمائندے نے جان بوجھ کر فرضی نقشہ پیش کیا‘وزارت کے ترجمان انوراگ سریواستو نے کہا کہ پاکستانی قومی سلامتی کے مشیر نے جان بوجھ کر ایک فرضی نقشہ پیش کیا جس کا پاکستان پروپیگنڈا کر رہا ہے، میزبان کی جانب سے اس کے خلاف مشورے کی توہین اور اس ملاقات کے اصولوں کی خلاف ورزی کی گئ۔


ای پیپر