بیوٹی سیلون پر استعمال ہونےوالے اوزار ہیپاٹائٹس بی ،سی اور ایڈز کا سبب بن رہے ہیں‘ینگ ڈاکٹرز
16 ستمبر 2019 (20:04) 2019-09-16

لاہور:ینگ ڈاکٹر ز ایسو سی ایشن پاکستان کے جنرل سیکرٹری ڈاکٹر سلمان کاظمی نے کہا ہے ہیپاٹائٹس اور ایڈز جیسی مہلک بیماریاں پھیلنے کی سب سے بڑی وجہ ہیر ڈریسر اور بیوٹی سیلون بن رہے ہیں، کیونکہ ان پر استعمال ہونے والا سامان مثلاً استرا ، قینچی ، کنگا ، ایپرن ، برش، نیل کٹر ر ،جیسی اشیاء با ر بار مختلف لوگوں پر استعمال کی جاتی ہیں ۔

انہوں نے تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنے اپنے اضلاع میں ہیر ڈریسر اور بیوٹی سیلون کو ہدایت جاری کریں کے وہ ڈسپوزایبل اوزار ا ستعمال کریںاور تمام بیوٹی سیلون اور ہیر ڈریسرز پوسٹر نمایاں جن پر ہیپاٹائٹس اور ایڈز جیسی مہلک بیماریوں کے متعلق آگاہی دستیاب ہوتا کہ لوگوں کو پتہ چل سکے کہ اپنی ہیرکٹینگ کٹ خریدنا کتنا ضروری ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ جو حجام اور بیوٹی سیلون ہیپاٹائٹس ایکٹ پر عمل نہیں کر رہے ان کو چھ ماہ قید اور ایک لاکھ روپے جرمانے کی سزا ہوسکتی ہے۔

ینگ ڈاکٹر ز نے تما م اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز سے مطالبہ کیا ہے کہ ایسے بیوٹی سیلون اور پارلرز جو ہیپاٹائٹس ایکٹ پر عمل نہیں کر رہے ، ان پر چھاپے مارکر گرفتاریاں شروع کی جائیں۔ تاکہ عوام کو ہیپا ٹائٹس بی سی ، ایڈز اوربہت سی خطرنا ک اور جان لیوا جلدی بیماریوں سے بچایا جا سکے۔


ای پیپر