فوٹوبشکریہ فیس بک

یونان کے ایک فٹبالر کو نازی سلیوٹ کرنا مہنگا پڑ گیا
16 ستمبر 2018 (12:22) 2018-09-16

ایتھنز: یونان کے ایک فٹبالر کو نازی سلیوٹ کرنا مہنگا پڑ گیا، دوران میچ نازی سلیوٹ پیش کرنے پر تاحیات پابندی عائد کر دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق یونان کے کھلاڑی کیٹیڈس نے دوران میچ نازی ازم کے مشہور نشان کی طرح سلیوٹ کیا جس پر ملک کی فٹبال فیڈریشن نے سخت ایکشن لیتے ہوئے اس پر یونان کی ہر طرح کی قومی سطح کی فٹبال کھیلنے کے لئے تاحیات پابندی عائد کر دی۔

یونان کی فٹبال فیڈریشن نے فٹبالر کی اس حرکت کو خطرناک اشتعال انگیزی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے نازی دور کے تمام متاثرین کی بے عزتی ہوئی۔

دوسری جانب اے کے ای ایتھنز کے مڈ فیلڈر جارجس کیٹیڈس نے اپنے سوشل میڈیا پیج پر اس الزام کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ اس نے اس نے نازی سلیوٹ نہیں کیا۔

کیٹیڈس کا کہنا تھا کہ میں فاشسٹ نہیں ہوں اور اگر مجھے اس سلیوٹ کا مطلب معلوم ہوتا تو میں اس طرح نہ کرتا۔ فٹبالر کا موقف ہے کہ اس نے صرف سٹینڈ میں بیٹھے اپنے ساتھی کھلاڑی کی جانب اشارہ کیا۔

متعلقہ کھلاڑی کے کلب اے ای کے نے کیٹیڈس سے کہا ہے کہ آئندہ ہفتے ہونے والی بورڈ میٹنگ میں اپنی پوزیشن واضح کریں۔

 

اے ای کے کلب کے جرمن کوچ نے غیر ملکی خبر رساں ادارے کو بتایا کہ کیٹیڈس ایک بچہ ہے جسے  سیاست کے بارے میں کوئی سمجھ بوجھ نہیں ہے۔ کوچ نے مزید کہا کہ کھلاڑی نے ایسا سیلوٹ انٹرنیٹ یا کہیں اور دیکھا اور اس کے مطلب سمجھے بغیر اسے دہرا دیا لیکن اس نے ایسا کیا۔

 

 

 


ای پیپر