تحریک انصاف اور مسلم لیگ ن کے کارکن آمنے سامنے آگئے ،صورتحال بگڑ گئی 
16 اکتوبر 2020 (21:39) 2020-10-16

لندن :لندن میں تحریک انصاف کے کارکن اور مسلم لیگ ن کے کارکن آمنے سامنے آگئے ، تحریک انصاف کے کارکنان نے نواز شریف کیخلاف احتجاجی مظاہرہ کیا جبکہ دوسری طرف مسلم لیگ ن کے کارکنان اپنے قائد سے اظہار یکجہتی کیلئے وہاں پہنچے تھے ۔

 لندن میں واقع ایون فیلڈہاؤس (حسن نواز کے دفتر) کے سامنے تحریک انصاف کے کارکنان نے نوازشریف کے خلاف احتجاج کیا، تحریک انصاف کے کارکنان نے نوازشریف اور مسلم لیگ ن کے بیانیے کے خلاف علم بغاوت بلند کرنے والے رکن صوبائی اسمبلی جلیل شرقپوری کی تصاویر بھی اٹھا رکھی تھیں۔

مظاہرین حسن نواز کے دفتر کے سامنے جمع ہوئے تو مسلم لیگ ن کے کارکنان بھی نوازشریف سے اظہارِ یکجہتی کے لیے وہاں پہنچ گئے جس کے بعد دونوں جماعتوں کے کارکنان نے ایک دوسرے کے خلاف نعرے بازی کی،دونوں فریقین کے درمیان کشیدگی بڑھی تو برطانوی پولیس ایون فیلڈ کے باہر پہنچ گئی اور مظاہرین کو دور کر کے سماجی فاصلہ برقرار رکھنے کی ہدایت بھی کی۔

یاد رہے کہ تحریک انصاف کے سابق سینئر رہنما کے صاحبزادے نے آج ایون فیلڈ اپارٹمنٹ کے باہر نوازشریف کے خلاف احتجاج کا اعلان کیا تھا، انہوں نے بتایا تھا کہ یہ مظاہرہ سماجی فاصلے کے ساتھ کیا جائے گا،قبل ازیں تحریک انصاف کے کارکنان کے متوقع احتجاج کے پیش نظر لندن میں مقیم نوازشریف نے چار نجی محافظوں کی خدمات حاصل کیں۔

واضح رہے کہ نوازشریف آج پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے تحت ہونے والے گوجرانولہ جلسے سے بذریعہ ویڈیو لنک خطاب کریں گے، اس ضمن میں حسن نواز کے دفتر میں خصوصی اسٹوڈیو قائم کیا گیا ہے۔


ای پیپر