ابر ارالحق کو چیئرمین ریڈ کریسنٹ کیوں مقرر کیا گیا ؟
16 نومبر 2019 (18:45) 2019-11-16

اسلام آباد:ابرار الحق کو ریڈ کریسنٹ کا چیئرمین مقررکرنے کا اقدام اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا ، ہفتہ کو سابق چیئرمین سعید الہٰی نے وکیل کے ذریعے ابرار الحق کی تعیناتی چیلنج کی ۔

درخواست میں کہاگیاکہ ابرار الحق کو 3 سال کیلئے چیئرمین مقرر کیا گیا ہے، بطور چیئرمین میری تعیناتی تین سال کے لیے کی گئی تھی۔سعید الہٰی کی درخواست میں کہاگیاکہ تین سال کی مدت نو مارچ 2020 میں مکمل ہو رہی ہے، میری تعیناتی کی مدت مکمل ہونے سے قبل ابرارالحق کی تعیناتی غیرقانونی ہے۔

درخواست میں کہاگیاکہ مجھے عہدے سے ہٹانے سے قبل نہ نوٹس دیا گیا اور نہ ہی معلومات دی گئیں ۔ درخواست میں استدعا کی گئی کہ عدالت گزشتہ روز جاری ہونے والے ابرارالحق کی تعیناتی کے نوٹیفکیشن جو کلعدم قرار دے، ابرارالحق سہارا فاونڈیشن کے سربراہ ہیں اس لیے یہ مفادات کا ٹکراو بھی ہے ۔

سیکرٹری کابینہ ڈویژن، صدر مملکت، وزارت صحت اور ابرارالحق درخواست میں فریق بنایاگیا ،گزشتہ شام کو صدر پاکستان کی منظوری کے بعد ابرارالحق کی تعیناتی کا نوٹیفکیشن جاری کیا تھا۔


ای پیپر