OIC, emergency meeting, Israeli attacks, Al-Aqsa Mosque, UN, Pakistan
16 May 2021 (20:51) 2021-05-16

جدہ :اوآئی سی اجلاس میں فلسطینیوں پر مظالم کیخلاف بالآخر قرارداد منظور کر لی گئی ،قراردادمیں مطالبہ کیا گیا کہ فوری طور پر اسرائیل فسلطین میں جاری مظالم بند کرے ،عالم اسلام اسرائیل کے وحشیانہ اقدامات کی سختی سے مذمت کرتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق او آئی سی کے ہنگامی اجلاس میں اسرائیل کیخلاف قرارداد کو منظور کر لیا گیا ،قرارداد کے متن میں واضح طورپر کہا گیا کہ فلسطین میں حالات کی خرابی کا ذمہ دار اسرائیل ہے ،قرارداد میں مطالبہ کیا گیا  کہ اسرائیل فلسطین میں جاری خلاف ورزیاں فوری بند کرے،اوآئی سی کی طرف منظور کی گئی قرارداد میں سلامتی کونسل سے مطالبہ کیا گیا کہ فوری طور پر اسرائیلی حملے بند کروائے جائیں ۔

قرارداد میں کہا گیا کہ عالمی برادری اپنی ذمہ داریاں پوری کرے ،اسرائیل مقدس مقامات کی بے حرمتی کرنے سے باز رہے ،اسرائیل کے اس طرح کے اقدامات سے تشدد کو مزید ہوا ملتی ہے جس سے حالات کشیدہ ہوتے رہینگے  جو ایک بڑی جنگ کا پیش خیمہ ثابت ہو سکتا ہے ۔

قرارداد میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل کے توسیعی منصوبے کو مسترد کرتے ہیں، سلامتی کونسل فوری طور پر اسرائیلی حملے بند کرائے، اسرائیل فلسطین میں مقدس مقامات کی بے حرمتی فوری بند کرے۔

واضح رہے اس سے قبل شاہ محمود قریشی نے او آئی سی اجلاس سے خطاب کے بعد میڈیا بریفنگ میں کہا تھا  کہ امت مسلمہ سعودی عرب کی شکر گزار ہے کہ انہوں نے فلسطین ایشو پر بروقت اجلاس طلب کیا ،کیونکہ اس وقت اسرائیل فلسطینیوں پر مظالم ڈھا کر انسانی حقوق کی دھجیاں اُڑا رہا ہے ،اسرائیل نے ماہ رمضان میں نہتے فلسطینیوں کو اپنے مظالم کا نشانہ بنایا،انہوں نے کہا اسرائیل کی جارحیت ناقابل برداشت ہے،پاکستان ہر فورم پر آواز اٹھائے گا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا قائداعظم کافلسطینیوں کے ساتھ دلی لگاؤ تھا،قائداعظم نے فلسطینیوں کے ساتھ ہر لمحہ تعاون کرنے کا کہاتھا،آج اُسی فلسطین پر کڑا وقت آن پہنچا ہے ،امت مسلمہ کا فرض بنتا ہے کہ فوری طور پر فلسطین پر ہونے والے مظالم کو روکنے کیلئے اقدامات کرے اور اسرائیل کی طرف سے طاقت کے استعمال کو رکوایا جائے ۔

انہوں نے کہا پاکستان کی پہلی ترجیح فلسطین میں سیز فائر ہے ، پاکستان چاہتا ہے کہ اسرائیل سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل، جنرل اسمبلی اور ہیومن رائٹس کونسل کی قراردادوں پر عملدرآمد کرایا جائے،شاہ محمودقریشی نے مطالبہ کیا کہ انسانیت کیخلاف جرائم کے ارتکاب اور بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی پر اسرائیل کو استثنا نہ دیا جائے،جارحیت کے مرتکب اسرائیل اور مظلوم فلسطینیوں کو ایک صف میں کھڑا کرنا ناانصافی ہے،میڈیا ہاؤسز کو جس طرح نشانہ بنایا گیا یہ فلسطینیوں کی آواز کو دبانے کی ناکام کوشش ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا سچائی کو لوگوں کی نظروں سے اوجھل کرنا انتہائی مشکل ہے،اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل، جنرل اسمبلی اور ہیومن رائٹس کونسل کی قراردادوں پر عملدرآمد کرایا جائے،اسرائیل کی جارحیت ناقابل برداشت ہے،پاکستان ہر فورم پر آواز اٹھائے گا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا فلسطینی وزیر خارجہ سے گزشتہ روز ٹیلی فونک رابطہ ہوا تھا ،دنیا کے دیگر ممالک کے وزرائے خارجہ سے بھی پاکستان رابطے میں ہے ،چین کے وزیر خارجہ سے فلسطین سے متعلق مفصل گفتگو ہوئی،امریکی وزیر خارجہ سے بھی مسئلہ فلسطین پر تفصیلی بات چیت کرینگے ،فلسطینیوں کے معاملات کو بحیثیت پاکستانی اور مسلمان ہر فورم پر اٹھانا ہمارا فرض ہے،پاکستان کا مطالبہ ہے عالمی برادری فلسطین میں اسرائیلی جارحیت رکوائے،مسلم امہ کو چاہیے اسرائیل کی جارحیت کوصحیح اندازمیں لوگوں کےسامنےپیش کیاجائے،دعا ہے اللہ تعالیٰ پاکستان کو فلسطینیوں کیلئے آواز بلند کرنے پرسرخرو فرمائے۔


ای پیپر