سیاسی انتقام لیا جا رہا ہے : رانا ثنا اللہ
16 جولائی 2019 (22:36) 2019-07-16

لاہور:منشیات برآمدگی کے الزام میں گرفتار مسلم لیگ (ن) پنجاب کے صدر رانا ثنا اللہ خان نے کہا ہے کہ سیاسی انتقام کیلئے اینٹی نار کوٹکس جیسے ساکھ کے حامل ادارے کے منہ پر بھی کالک مل دی گئی ہے، اس میں پاک فوج کے حاضر سروس لوگ کام کر رہے ہیں اس لئے میرا آرمی چیف سے مطالبہ ہے کہ اس کا نوٹس لیں ۔

 عدالت میں پیشی کے موقع پر صحافی نمائندوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے رانا ثنا اللہ خان نے کہا کہ میں ظلم کے خلاف دھائی نہیں دوں گا بلکہ ڈٹ کر مقابلہ کروں گا ۔ وہ تھانیدار جس نے بھینس چوری کا مقدمہ درج کیا تھا اس کا منہ آج تک کالا ہے ۔ سیاسی انتقام کیلئے اے این ایف جیسے ساکھ کے حامل ادارے کے منہ بھی کالک مل دی گئی ۔پولیس جس نے بھینس چوری کا مقدمہ درج کیا تھا اے این ایف اس سے بھی گر گیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ اس ادارے میں پاک فوج کے حاضر سروس لوگ کام کرتے ہیں میرا آرمی چیف سے مطالبہ ہے کہ اس کا نوٹس لیں ۔ جنرل آصف غفور باجوہ نے پارلیمنٹ میں بریفنگ کے دوران ہمیں کہا تھاکہ ہم نے قوم سے سچ بولا ہے اور اسی کی بدولت بھارت کو پسائی ہوئی اور ہم کامیاب ہوئے ۔ آپ نے کہا تھاکہ سچ سر خرو ہوتا ہے ، کیا یہ سچ آپ تک نہیں پہنچا ، قوم کو نہ سہی لیکن اپنے چیف تک ہی اسے پہنچا دیں۔

انہوں نے کہا کہ میرا بلڈ ٹیسٹ کرالیں اگر اس کی رپورٹس میں سگریٹ کی آمیزش بھی نکلے تو مجھے بغیر ٹرائل کے سزا دیدیں اور پھر نالائق اعظم کا بھی بلڈ ٹیسٹ کیا جائے ۔ میں کسی سہولت کے نہ ملنے کا شکوہ نہیں کروں گا میں نے سوچ رکھاہے کہ میں نے پاکستان میں رہنا ہے جتنا بھی ظلم کرنا ہے کرلیں میرے حوصلے بلندہیں۔مجھ پر دبائوہے ،یہ ظلم ہے اورظلم کی دھائی دینے کی بجاے اسے للکارنا چاہیے ،یہ ظلم اپنے عبرتناک انجام بھگتے گا۔

انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ جب ججز خفیہ اداروں کے چنگل میں ہوں اور جب ویڈیو اور دبائو کے تحت فیصلے ہوں تو اس ملک میں ترقی نہیں ہوتی ، وہاں خوشحالی آتی ہے او رنہ ٹیکس اکٹھا ہوتا ہے بلکہ خانہ جنگی ہوتی ہے اور موجودہ حکمران ٹولے نے ملک کو اس نہج پر پہنچا دیا ہے ۔


ای پیپر