بلوچستان میں اے این پی کے رہنما دائود اچکزئی حملے میں زخمی
16 جولائی 2018 (14:32) 2018-07-16


کوئٹہ: بلوچستان کے علاقے قلعہ عبداللہ میں فائرنگ کے نتیجے میں اے این پی کے مرکزی نائب صدر اور سابق سینیٹر دائود اچکزئی زخمی ہوگئے ۔


تفصیلات کے مطابق قلعہ عبداللہ میں عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار انجینئر زمرک اچکزئی کے مہمان خانے پر نامعلوم ملزمان نے فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں اے این پی کے مرکزی نائب صدر اور سابق سینیٹر دائوداچکزئی زخمی ہوگئے، طبی امداد کیلئے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ۔ ہسپتال ذرائع کے مطابق دائود اچکزئی کو گولی بازو میں لگی جن کی حالت خطرے سے باہر ہے ۔ لیویزحکام کے مطابق کہ فائرنگ کا واقعہ قلعہ عبداللہ کے علاقے پیرعلی زئی میں پیش آیا، جس کے بعد علاقے کی ناکہ بندی کر دی گئی، فائرنگ کے بعد ملزمان باآسانی فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے جن کی تلاش شروع کر دی گئی ۔


خیال رہے کہ دو روز قبل مستونگ میں بلوچستان عوامی پارٹی کے جلسے میں ہونے والے خود کش حملے میں سراج رئیسانی سمیت ایک سو اٹھائیس سے زائد افراد شہید ہوئے تھے ۔یاد رہے گذشتہ دنوں پی کے 78 سے عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار ہارون بلور بھی اپنی انتخابی مہم کے سلسلے میں پشاور میں ایک کارنر میٹنگ کے دوران اسٹیج کی جانب جا رہے تھے کہ ایک خودکش حملہ آور نے انہیں نشانہ بنا ڈالا۔ اس واقعے میں اے این پی رہنما سمیت 20 سے زائد افراد شہید ہو گئے تھے۔


ای پیپر