ہانیہ عامر نے بھی جنسی ہراسانی کا الزام لگا دیا
16 اگست 2018 (19:19) 2018-08-16

کراچی: نامور پاکستانی اداکارہ ہانیہ عامر کا کہنا ہے کہ اداکارہ اور مشہور شخصیت ہونے کا یہ مطلب نہیں ہے کہ ہمیں ہمارے مداح جنسی ہراساں کریں۔نامور پاکستانی اداکارہ حمائمہ ملک اور گلوکارہ میشا شفیع کے بعد اداکارہ ہانیہ عامر بھی جنسی ہراسانی کے خلاف بول پڑیں۔


ٹوئٹر پر اداکاراؤں کو ان کے مداحوں کی جانب سے جنسی ہراساں کیے جانے کا معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ مشہور شخصیت ہونے کا یہ مطلب نہیں کہ مداح ہمیں عوامی مقامات پر جنسی ہراساں کریں۔ ہانیہ نے کہا ایسی حرکت کرنے والوں کو ’’مداح‘‘ کس طرح کہا جاسکتا ہے جو ہماری محبت کے جواب میں ہمیں جنسی ہراساں کرکے شرمندہ کرتے ہیں اور ذہنی پریشانی دیتے ہیں۔ ہانیہ عامر نے کہا جب ہم عوامی مقامات پر جاتے ہیں تو لوگ ہمیں بے حد پیار اور محبت دیتے ہیں اورآپ لوگوں کی اسی محبت کے جواب میں ہم فنکار کچھ وقت آپ کے ساتھ گزارتے ہیں لیکن آپ ہی میں سے کچھ لوگ ہمیں ہراساں کرتے ہیں لہٰذا ان لوگوں کی اس حرکت کے بعد ہم دوبارہ سوچنے پر مجبور ہوجاتے ہیں کہ آپ کے ساتھ وقت گزارنے کا ہمارا فیصلہ درست تھا؟


ہانیہ عامر نے خواتین کے ساتھ پیش آ نے والے جنسی ہراسانی کے واقعات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جنسی ہراسانی کا دفاع کرنا بالکل بھی صحیح نہیں آج بھی چند لوگ خواتین کو صرف ایک’’چیز‘‘ کے طور پر دیکھتے ہیں اور یہ سوچ اسی وقت ختم ہوگی جب اس حوالے سے لوگوں کو صحیح تعلیم دی جائے گی۔ان چند افراد کی وجہ سے خواتین کا گھر سے باہرنکلنا مشکل ہوگیا ہے لہٰذا خواتین کی عزت کریں جیسے آپ ان سے عزت ملنے کی امید کرتے ہیں۔واضح رہے کہ چند روزقبل نامور اداکارہ حمائمہ ملک نے بھی جنسی ہراسانی کا واقعہ بیان کرتے ہوئے کہا تھا کہ انہیں لاہور کے مقامی ہوٹل میں ایک اجنبی شخص کی جانب سے جنسی طور پر ہراساں کیا گیا تھا۔ اس کے علاوہ گلوکارہ میشا شفیع بھی علی ظفر پر جنسی ہراسانی کا الزام لگاچکی ہیں۔


ای پیپر