Photo Credit : Yahoo

بھارت، پروین توگڑیا نے مودی کے خلاف محاذ کھول دیا
16 اپریل 2018 (17:28)

احمد آباد:وشوا ہندو پریشد سے نکالے جانے کے بعد پروین توگڑیا نے مودی کے خلاف محاز کھول دیا ، ہندوقوم کی فلاح وبہبود کیلئے کام کرتا رہونگا،مطالبات کی منظوری تکغیر معینہ بھوک ہڑتال شروع کرنے کی دھمکی دے دی۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق بھارتی جماعت وشوا ہندو پریشد سے نکالے جانے کے بعد پروین توگڑیا نے مرکزی حکومت پر سخت نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ 2002کے گجرات فسادات کے بعد نریندر مودی سے ان کے تعلقات کمزور ہونا شروع ہوگئے تھے۔

آئندہ منگل سے غیر معینہ بھوک ہڑتال شروع کرنے والے توگڑیا نے کہا کہ اب وشو ہندو پریشد میں میرا کوئی کردار نہیں البتہ ہندوقوم کی فلاح وبہبود کیلئے کام کرتا رہونگا۔ان کے مطالبات منوانے کیلئے احمد آباد میں غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال کرونگا۔واضح ہو کہ وی ایچ پی کے بین الاقوامی صدر کے انتخاب میں ہماچل پردیش کے سابق گورنر وی ایس کوکجے نے توگڑیا کے امیدوار رادھوریڈی کو ہرادیا۔ توگڑیا نےگجرات میں وی ایچ پی عہدیداروں سے ملاقات کے بعد کہا کہ میرا مرکزی حکومت سے 4برس میں اعتماد اٹھ گیا۔


ای پیپر